ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اناؤ آبرو ریزی معاملہ: رکن اسمبلی کلدیپ سنگھ سنگر قصور وارقرار، کل سنائی جائے گی سزا، سی بی آئی کو لگی پھٹکار

دہلی کے تیس ہزاری کورٹ نے پیرکواپنا فیصلہ سناتےہوئے بی جے پی سے معطل رکن اسمبلی کلدیپ سنگھ  سنگرکو قصوروار قراردیا ہے۔ ساتھ ہی ایک دیگرملزم ششی سنگھ کوعدالت نے بری کردیا ہے۔ سزاپربحث 19 دسمبرکوکی جائے گی۔

  • Share this:
اناؤ آبرو ریزی معاملہ: رکن اسمبلی کلدیپ سنگھ سنگر قصور وارقرار، کل سنائی جائے گی سزا، سی بی آئی کو لگی پھٹکار
اناؤ آبروریزی معاملے میں رکن اسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر قصوروار

نئی دہلی: اناؤ آبروریزی معاملے میں آخرعدالت کا فیصلہ آہی گیا۔ دہلی کے تیس ہزاری کورٹ نے پیرکواپنا فیصلہ سناتےہوئے بی جے پی سے معطل رکن اسمبلی کلدیپ سنگھ  سنگرکو قصوروار قراردیا ہے۔ ساتھ ہی ایک دیگرملزم ششی سنگھ کوعدالت نے بری کردیا ہے۔ واضح رہےکہ 2017 میں متاثرہ کے ساتھ آبروریزی کی گئی تھی۔ بعد میں 2018 میں سی بی آئی نےاس سے متعلق معاملہ درج کیا تھا۔ اطلاعات کے مطابق سزا پربحث 19 دسمبرکوکی جائے گی۔


قابل ذکرہے کہ کلدیپ سنگرکے خلاف آبروریزی اوراغواکے معاملے میں تیس ہزاری عدالت میں سماعت چل رہی تھی۔ سینگرپرابھی تین اورمعاملے دہلی کی خصوصی سی بی آئی عدالت میں چل رہے ہیں۔ ابھی کلدیپ سنگھ سنگرکو آبروریزی معاملے میں قصوروارقراردیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ کلدیپ سنگھ کو 14 اپریل 2018 کوگرفتارکیا گیا تھا۔




ششی سنگھ کو ملا شک کا فائدہ

عدالت نے ششی سنگھ کے معاملے میں کردارکوشک کے گھیرے میں رکھا۔ ششی سنگھ کے خلاف وافرثبوت نہ ہونے اور نہ معاملے میں سیدھے طورپرکردارواضح ہونے کے سبب عدالت نے انہیں شک کا فائدہ دیتے ہوئے معاملے سے بری کردیا ہے۔

سی بی آئی کوپھٹکار

اس کے ساتھ ہی عدالت نے سی بی آئی کوبھی جم کرپھٹکارلگائی۔ عدالت نے معاملے کی جانچ میں دیرکرنے اورچارج شیٹ داخل کرنے میں وقت لگانے کولے کرسی بی آئی کوآڑے ہاتھ لیا۔ عدالت نے کہا کہ سی بی آئی نے چارج شیٹ فائل کرنے میں ایک سال لگا دیا۔ اس سے جانچ ایجنسی بھی سوالوں کے گھیرے میں آتی ہے۔ عدالت نے کہا کہ جانچ ایجنسی نے متاثرہ کوبیان دینے کے لئے کئی باربلایا جبکہ سی بی آئی کے افسران کومتاثرہ کے پاس بیان لینے کے لئے جانا چاہئے تھا۔

طاقتورشخص سے لڑرہی تھی متاثرہ

عدالت نے اپنا فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ متاثرہ واردات کے وقت نابالغ تھی اوراس کے ساتھ سیکسوئل اسالٹ (جنسی تشدد) ہوا۔ وہ خوفزدہ دی تھی، اسے مسلسل دھمکیاں دی جارہی تھیں۔ اس کی فیملی کوجان کا خطرہ تھا۔ عدالت نے کہا کہ وہ ایک  طاقتورشخص سے لڑرہی تھی اوراسی کے سبب متاثرہ فیملی پرفرضی کیس بھی لگائے گئے۔

 

 
First published: Dec 16, 2019 04:04 PM IST