உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گروگرام میں اب نہیں ہوگی نماز کی مخالفت، میٹنگ میں لیا گیا بڑا فیصلہ

    گروگروام میں نماز جمعہ کی ادائیگی کی اب نہیں ہوگی مخالفت۔

    گروگروام میں نماز جمعہ کی ادائیگی کی اب نہیں ہوگی مخالفت۔

    ڈپٹی کمشنر کی جانب سے مسلمانوں اور ہندووں کی طلب کردہ ایک میٹنگ میں یہ فیصلہ ہوا۔ مشترکہ میٹنگ میں یہ فیصلہ لیا گیا کہ اب عوامی جگہوں پر نماز نہیں ہوگی۔ اب ضلع کی 12 مسجدوں میں جمعہ کی نماز ادا کی جائے گی۔

    • Share this:
      گروگرام: ہریانہ کے گروگرام (Gurugram) ضلع میں اب نماز (Namaz) کی مخالفت نہیں ہوگی۔ ڈپٹی کمشنر کی جانب سے مسلمانوں اور ہندووں کی طلب کردہ ایک میٹنگ میں یہ فیصلہ ہوا۔ مشترکہ میٹنگ میں یہ فیصلہ لیا گیا کہ اب عوامی جگہوں پر نماز نہیں ہوگی۔ اب ضلع کی 12 مسجدوں میں جمعہ کی نماز ادا کی جائے گی۔ وہیں، 6 عوامی مقامات پر نماز پڑھنے کے لئے کرایہ دینا ہوگا۔ وقف بورڈ کی زمین مہیا ہوتے ہی 6 عوامی مقامات پر بھی نماز بند کردی جائے گی۔

      گروگرام کے ضلع ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر یش گرگ نے پولیس عہدیداروں کے ساتھ مشترکہ ہندو سنگھرش سمیتی کے ارکان، مسلم راشٹریہ منچ کے ارکان امام تنظیم کے متعدد مولویوں نے بیٹھ کر آپسی اتفاق سے مجموعی طور پر 18 مقاما ت پر نماز ادا کرانے کے لے اتفاق رائے ظاہر کیا ہے۔ ان میں سے 12 مقامات مسلم طقے کی مسجد یا عید گاہ ہیں۔ جب کہ چھ مقام ضلع انتظامیہ کی جانب سے عبوری طور پر معمولی رکھ رکھاو کے خرچ کی ادائیگی کے ساتھ مہیا کرائے جائیں گے۔

      اس کے ساتھ ہی ایک اور شرط یہ بھی رکھی گئی ہے کہ گروگرام کے 19 وقف بورڈ کے ایسے مقامات بھی ہیں جو کہ لیز پر دئیے گئے ہیں یا اُن پر قبضہ ہے، اُنہیں ضلع انتطامیہ جیسے ہی خالی کراکر مسلم کمیونٹی کو سونپے گا، ویسے ویسے ضلع انتظامیہ کی جانب سے مہیا کرائے گئے چھ مقامات پر نماز ادا کرنا بند ہوتی جائے گی۔

      نماز کی مخالفت پر کانگریز ارکان اسمبلی نے گورنر کو سونپا تھا میمورنڈم

      گروگرام میں نماز جمعہ کی مخالفت کو لے کر ہریانہ کے گورنر بنڈارودتاتریہ نے کہا ہے کہ نیو ضلع کے تینوں کانگریسی ارکان اسمبلی نے اُنہیں آج میوات دورے کے دوران میمورنڈم دیا ہے۔ گورنر نے کہا کہ عہدیداروں سے اس بارے میں بات چیت کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ دونوں طبقے اس مسئلہ کو سلجھا لیں گے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ حکومت اس معاملے میں کارروائی کررہی ہے۔ سی ایل بی لیڈر آفتاب احمد نے کہا کہ اُن کے ساتھ ایک اور ایم ایل اے محمد الیاس اور فیروزپور جھرکی کے رکن اسمبلی محمد خان انجینئر نے پیر کو میوات دورے کے دوران گورنر بنڈارودتاتریہ کو گروگرام میں نماز جمعہ میں رکاوٹ ڈالنے کو لے کر میمورنڈم سونپا ہے۔


      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: