ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

میرٹھ میں موجود ان تاریخی نشانیوں سے مہاتما گاندھی کے دورے کی یادیں ہوتی ہیں تازہ 

میرٹھ میں مصطفی کاسل، میرٹھ کالج ، گھنٹہ گھر ، برف خانہ ، نوچندی میدان اور گاندھی آشرم آج بھی مہاتما گاندھی کے دورے کی اہم نشانیوں کے طور پر موجود ہیں۔ میرٹھ کی تاریخی عمارت مصطفی کاسل نواب اسماعیل خان سے گاندھی جی کے تعلقات اور تحریک جنگ آزادی میں ان کی خدمات اور قربانیوں کی داستان آج بھی بیان کرتا ہے۔

  • Share this:
میرٹھ میں موجود ان تاریخی نشانیوں سے مہاتما گاندھی کے دورے کی یادیں ہوتی ہیں تازہ 
میرٹھ میں موجود ان تاریخی نشانیوں سے مہاتما گاندھی کے دورے کی یادیں ہوتی ہیں تازہ 

میرٹھ شہر کی خاصیت اس کی تاریخی اہمیت سے وابستہ ہے۔ میرٹھ اپنی تاریخ میں کئی اہم شخصیات کی یادوں کو آج بھی محفوظ کئے ہوئے ہے۔ ایسی ہی ایک شخصیت کا نام موہن داس کرم چند گاندھی ہے۔ تحریک جنگ آزادی کے دور میں گاندھی جی نے نہ صرف اس شہر کا کئی مرتبہ دورہ کیا بلکہ یہاں کی عوام کی قربانی اور آپسی محبت کے جذبے کا بھی ذکر کیا۔ آج کے اس پرآشوب ماحول میں ایک بار پھر مہاتما گاندھی اور ان کی تعلیمات کو سمجھنے کی ضرورت محسوس کی جارہی ہے۔


میرٹھ میں مصطفی کاسل، میرٹھ کالج ، گھنٹہ گھر ، برف خانہ ، نوچندی میدان اور گاندھی آشرم آج بھی مہاتما گاندھی کے دورے کی اہم نشانیوں کے طور پر موجود ہیں۔ میرٹھ  کی تاریخی عمارت مصطفی کاسل نواب اسماعیل خان سے گاندھی جی کے تعلقات اور تحریک جنگ آزادی میں ان کی خدمات اور قربانیوں کی داستان آج بھی بیان کرتا ہے۔ گاندھی جی کے اس مقام پر قیام کرنے کے علاوہ تحریک آزادی میں یہاں کے لوگوں کی خدمات اور قربانیوں کا بھی ذکر تاریخ کے صفحات میں درج ہے۔ اس کے علاوہ میرٹھ شہر میں گاندھی آشرم اور میرٹھ کالج نے بھی اپنے وجود میں مہاتما گاندھی کی یادوں کو سمیٹ کر رکھا ہوا ہے۔


گاندھی جی کے 21 دن کے برت  کی یاد میں میرٹھ کالج میں 1943 میں ایک برگد کا پیڑ لگایا گیا تھا جو آج بھی موجود ہے۔ تاریخ کے جانکار اور سماجی افراد مانتے ہیں کہ دوبارہ ملک میں جس طرح سے اب سفاکی اور تشدد کا ماحول پیدا ہو رہا ہے وہ سماج اور ملک کی سلامتی کے لیے خطرناک ثابت ہورہا ہے۔ گاندھی جی کے وقت میں ملک میں جب بھی کبھی اس طرح کے حالات پیدا ہوئے یا پیدا کرنے کی کوشش کی گئی تو گاندھی جی نے تحریک انشن اور مرن برت کے ذریعے عوام کو نہ صرف سمجھانے کی کوشش کی بلکہ حکمرانوں کو بھی جھکنے پر  مجبور کر دیا۔


مہاتما گاندھی سے وابستہ نشانیاں ان کی یادوں کو ذہنوں میں تازہ کرنے کے ساتھ گاندھی جی کی تعلیمات کو سمجھنے کا ذریعہ بھی ہیں اور آج کے وقت میں اس کی اہمیت کو سمجھنے کی ضرورت زیادہ محسوس کی جارہی ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 03, 2020 09:34 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading