ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی تشدد معاملے میں 3 اور گرفتار، براڑی اور لال قلعہ تشدد میں شامل تھے تینوں

آپ کو بتا دیں کہ اس سے پہلے ایس آئی ٹی دلی تشدد کے معاملے میں 2 اور لوگوں کو گرفتار کر چکی ہے۔ اب تک لال قلعہ تشدد معاملہ میں 5 ملزمان گرفتار ہو چکے ہیں۔

  • Share this:
دہلی تشدد معاملے میں 3 اور گرفتار، براڑی اور لال قلعہ تشدد میں شامل تھے تینوں
کسان احتجاج کی فائل فوٹو: فوٹو اے پی

نئی دہلی۔ کسان تحریک کو لے کر یوم جمہوریہ کے موقع پر ٹریکٹر ریلی کے دوران ہوئے پرتشدد واقعات کے معاملے میں دلی پولیس نے 3 اور ملزمان کو گرفتار کیا ہے۔ پولیس کے مطابق، یہ تینوں ملزمان براڑی اور لال قلعہ پر ہوئے تشدد کے واقعات میں شامل تھے۔ ٹریکٹر ریلی کے دوران ہوئے تشدد کی جانچ کر رہی خصوصی جانچ ٹیم نے ان تین ملزمان کو گرفتار کیا ہے۔


آپ کو بتا دیں کہ اس سے پہلے ایس آئی ٹی دلی تشدد کے معاملے میں 2 اور لوگوں کو گرفتار کر چکی ہے۔ اب تک لال قلعہ تشدد معاملہ میں 5 ملزمان گرفتار ہو چکے ہیں۔ اس سے پہلے دلی پولیس کی ایس آئی ٹی نے لال قلعہ تشدد معاملے میں 25 مشتبہ ملزمین کی تصویریں جاری کی تھیں۔ بتایا جاتا ہے کہ ان تصویروں میں دیپ سدھو بھی شامل ہے۔


خیال رہے کہ زرعی قوانین (Agricultural Laws) کے خلاف کسانوں کی ملک گیر سطح پر چکہ جام (Chakka Jam) تحریک کے پیش نظر دلی اور این سی آر میں سیکورٹی چاق وچوبند کر دی گئی ہے۔ یوم جمہوریہ کے موقع پر کسانوں کی ٹریکٹر ریلی کے دوران ہوئے پرتشدد واقعات کے بعد پولیس الرٹ موڈ پر ہے۔ آج دوپہر 12 بجے سے لے کر 3 بجے تک کسان بھر کے قومی اور ریاستی شاہراہوں پر گاڑیوں کا چکہ جام کر رہے ہیں۔ دلی، یوپی اور اتراکھنڈ پر حالانکہ، اس تحریک کا اثر نہیں پڑے گا لیکن پولیس کسی بھی طرح کی صورت حال سے نمٹنے کے لئے پہلے سے تیار ہے۔


اے این آئی کی رپورٹ کے مطابق، دلی اور این سی آر کے علاقے میں دلی پولیس، پیراملٹری فورس کے جوان اور سینٹرل ریزرو فورس کے جوانوں کو بڑی تعداد میں مختلف جگہوں پر تعینات کیا گیا ہے۔ پرتشدد واقعات کے اندیشہ کے مدنظر دلی کے 12 میٹرو اسٹیشنوں کو بھی الرٹ موڈ پر رہنے کو کہا گیا ہے۔ دلی پولیس نے ان میٹرو اسٹیشنوں کو اس بات کے لئے تیار رہنے کو کہا ہے کہ کسی بھی طرح کا واقعہ ہونے پر ان اسٹیشنوں کی انٹری اور ایگزٹ کو فوری طور پر بند کر دیا جائے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Feb 06, 2021 01:58 PM IST