ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی :سرکاری اسکولوں میں جمعہ کی نماز کیلئے وقت نہ دئے جانے کو لے کر اقلیتی کمیشن کا داخلہ سکریٹری کو نوٹس

دہلی اقلیتی کمیشن نے دہلی حکومت کے اسکولوں کے اساتذہ کو جمعہ کے دن نماز کی ادائیگی کیلئے وقت نہ دئے جانے کو لے کر مرکزی داخلہ سکریٹری کو ایک نوٹس بھیجا ہے ۔

  • Share this:
دہلی :سرکاری اسکولوں میں جمعہ کی نماز کیلئے وقت نہ دئے جانے کو لے کر اقلیتی کمیشن کا داخلہ سکریٹری کو نوٹس
ڈاکٹر ظفرالاسلام خان اسلاموفوبیا سے متعلق اپنے بیان پر قائم ہیں۔

نئی دہلی : دہلی اقلیتی کمیشن نے دہلی حکومت کے اسکولوں کے اساتذہ کو جمعہ کے دن نماز کی ادائیگی کیلئے وقت نہ دئے جانے کو لے کر مرکزی داخلہ سکریٹری کو ایک نوٹس بھیجا ہے ۔ جمعہ کی نماز کیلئے وقت نہ دئے جانے کے معاملہ میں کمیشن نے 1954 کے ایک آرڈر کو لے کر داخلہ سکریٹری سے وضاحت طلب کی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ مارچ کے مہینے میں دہلی اقلیتی کمیشن میں اکھل دلی پراتھمیک شکشا سنگھ کی جانب سے شکایت درج کرائی گئی تھی۔ شکایت میں کہا گیا تھا کہ دہلی حکومت کے اسکولوں میں پڑھانے والے دوسری شفٹ کے اساتذہ کو جمعہ کے دن نماز کیلئے وقت نہیں دیا جاتا ہے۔ سنگھ کا کہنا ہے کہ یہ مسلم اساتذہ کے ساتھ ناانصافی ہے اور انہیں نماز کیلئے وقت دیا جانا چاہئے۔

اقلیتی کمیشن کی جانب سے محکمہ تعلیم کو نوٹس جاری کیا گیا ، لیکن محکمہ نے ایسے کسی بھی بندوبست سے انکار کردیا ۔ لیکن اس کے بعد 1954 کا وزارت داخلہ کا ایک آرڈر سامنے آیا ، جس میں نماز کیلئے جانے کی اجازت دی گئی ہے ، لیکن اتنے وقت کی تنخواہ کاٹنے کیلئے کہا گیا ۔ اس معاملہ میں اقلیتی کمیشن نے داخلہ سکریٹری سے وضاحت طلب کی ہے۔

دہلی حکومت کے اسکولوں میں کام کرنے والے دوسری شفٹ کے اساتذہ کی پریشانی یہ ہے کہ ان کی شفٹ 12:45 بجے سے شروع ہوتی ہے اور 6:15 بجے تک جاری رہتی ہے ۔ ایسے میں یہ اساتذہ نماز نہیں ادا کرپاتے ہیں ۔خاص بات یہ ہے کہ ان اساتذہ کیلئے آواز اٹھانے والے خود مسلمان نہیں ہیں۔

خرم شہزاد کی رپورٹ 

First published: Apr 25, 2018 09:31 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading