ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

لاک ڈاون کے 48 دن بعد آج پھر سے چلیں گی ٹرینیں، 15 جوڑی ٹرینوں سے 63 اسٹیشنوں کے مسافروں کو ملے گا فائدہ

وزارت ریلوے کی اطلاعات کے مطابق نئی دہلی اسٹیشن سے یہ گاڑیاں ڈبروگڑھ، اگرتلا، ہوڑہ، پٹنہ، بلاسپور، رانچی، بھونیشور، سکندرآباد، بنگلور، چنئی، ترواننت پورم، مڈگاؤں ، ممبئی سینٹرل، احمد آباد اور جموں توی کے لئے اور وہاں سے واپسی کی سمت میں چلائی جائیں گی۔

  • UNI
  • Last Updated: May 12, 2020 08:12 AM IST
  • Share this:
لاک ڈاون کے 48 دن بعد آج پھر سے چلیں گی ٹرینیں، 15 جوڑی ٹرینوں سے 63 اسٹیشنوں کے مسافروں کو ملے گا فائدہ
لاک ڈاون کے 48 دن بعد آج پھر سے چلیں گی ٹرینیں

نئی دہلی۔ کورونا وائرس(Coronavirus) وبا سے نمٹنے کے لئے ملک بھر میں پچھلے 48 دنوں سے چل رہے لاک ڈاون  (Lockdown)  کے درمیان آج سے ملک کے چنندہ شہروں کے لئے ٹرینیں چلائی جائیں گی۔ انڈین ریلوے منگل سے مسافر ٹرینوں کی سروس کو جزوی طور پر بحال کرتے ہوئے 15 شہروں کے لئے خصوصی ٹرینیں چلانے جا رہی ہے جن کے لئے راجدھانی ایکسپریس کے برابر کرایہ لیا جائے گا۔ یہ ٹرینیں راستے میں کل 48 اسٹیشنوں پر ركیں گی جن میں سوار ہونے کے لئے مسافروں کو روانگی سے 90 منٹ پہلے اسٹیشن پہنچنا ہوگا۔


وزارت ریلوے کی اطلاعات کے مطابق نئی دہلی اسٹیشن سے یہ گاڑیاں ڈبروگڑھ، اگرتلا، ہوڑہ، پٹنہ، بلاسپور، رانچی، بھونیشور، سکندرآباد، بنگلور، چنئی، ترواننت پورم، مڈگاؤں ، ممبئی سینٹرل، احمد آباد اور جموں توی کے لئے اور وہاں سے واپسی کی سمت میں چلائی جائیں گی۔ یہ گاڑیاں مکمل طور پر ایئر کنڈیشنڈ ہوں گی اور ٹرینوں میں ایئر کنڈیشنڈ فرسٹ، سکنڈ اور تھرڈ قسم کے کوچز ہوں گے۔ راجدھانی ایکسپریس کے ٹائم ٹیبل اور رفتار کے مطابق چلنے والی یہ گاڑیاں راستے میں کل 48 اسٹیشنوں پر ركیں گی۔ اس طرح سے کل 63 اسٹیشنوں کے مسافروں کو ان ٹرینوں کے چلنے سے فائدہ ہو گا۔ ان کا کرایہ بھی راجدھانی ایکسپریس کے کرایہ کے برابر ہو گا۔


ریلوے کی وزارت کے مطابق چونکہ ریلوے مسافروں کو کھانا، پانی، ناشتہ وغیرہ نہیں دے گا، لہذا کیٹرنگ آن کرایہ میں شامل نہیں ہوگا۔ریزرویشن کے وقت پری پیڈ کھانے اور ای-کیٹرنگ کی سہولت غیر فعال رہے گی۔ گاڑی میں کسی کو بھی کمبل، تکیہ، شیٹ وغیرہ نہیں دیئے جائیں گے۔ ٹرینوں میں پردے بھی نہیں ہوں گے۔ مسافروں کو اپنی چادر لانے کو کہا گیا ہے۔ کوچ کے اندر کا درجہ حرارت اسی حساب سے رکھا جائے گا۔ مسافروں کو اپنا کھانا اور پانی گھر سے ہی لانے کی حوصلہ افزائی کی جائے گی۔ اگرچہ پانی کی بوتلیں اور محدود قسم کی پیکٹ والی اشیائے خوردونوش ادائیگی پر دستیاب ہوں گی۔




کوئی بھی ویٹنگ لسٹ یا آر اے سی ٹکٹ جاری نہیں کیا جائے گا۔ جن 63 ریلوے اسٹیشنوں پر یہ گاڑیاں ركیں گی، ان پر محدود تعداد میں بکنگ کاؤنٹر کھولے جائیں گے جن میں اعلی افسران، ارکان پارلیمنٹ، سابق ممبران پارلیمنٹ، ممبران اسمبلی،مجاہدین آزادی ، معذور، مریض وغیرہ رعایت پانے والوں، وارنٹ اور پاس بنیاد پر ٹکٹ جاری کئے جائیں گے۔ جنرل بغیر رعایت والے ٹکٹ آن لائن ہی بک کئے جاسکیں گے۔ ٹرینوں میں ٹی ٹی ای ٹکٹ نہیں بنا سکیں گے۔ غیر ریزروڈ ٹکٹ قابل قبول نہیں ہوں گے۔

ریل کی وزارت کے مطابق بکنگ کے بعد روانگی کے لئے صرف کنفرم ٹکٹ والے مسافروں کو اسٹیشن آنے دیا جائے گا۔ گاڑی میں سوار ہونے کے 90 منٹ پہلے تمام مسافروں کو اسٹیشن پہنچنا ہوگا۔ تھرمل اسکریننگ کے بعد ہی صرف ان مسافروں کو داخل ہونے دیا جائے گا جن میں کورناوائرس کے کوئی علامات نہیں ہوں گے۔ مسافروں کو سفر کے دروان ماسک کور پہننا لازمی ہوگا۔ مسافروں کو اسٹیشن پر اور گاڑیوں میں سوشل ڈسٹنسنگ پر عمل کرنا ضروری ہوگا۔ اسٹیشن پر اترنے کے بعد مسافروں کو اس ریاست کی حکومت کی طرف سے مقرر ہیلتھ پروٹوکول پاس کرنا ہوگا۔
First published: May 12, 2020 08:12 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading