ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کوروناوائرس کے دوران وادی کشمیر کے نوجوانوں میں اب پہاڑوں پر ٹریکنگ کرنے کا بڑھنےلگا رجحان، لوگوں نے اٹھایا یہ قدم

وادی کشمیر کے نوجوانوں   ہر ہفتے ایک روز کی ٹریکنگ کے لئے  ایک نئی جگہ کا تعین کرتے ہیں۔  وادی کشمیر کے تمام  پہاڑوں پر ٹریکنگ کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

  • Share this:
کوروناوائرس کے دوران وادی کشمیر کے نوجوانوں میں اب پہاڑوں پر ٹریکنگ کرنے کا بڑھنےلگا رجحان، لوگوں نے اٹھایا یہ قدم
وادی کشمیر کے نوجوانوں میں اب پہاڑوں پر ٹریکنگ کرنے کا رجحان بڑھنےلگا

کورناوائرس کی وجہ سے جہاں تمام تر سرگرمیاں متاثر ہوئیں وہیں کھیل سرگرمیوں میں بھی ماند پڑگئی۔ وادی کشمیر میں گرمی کے ان ایام میں نوجوان کھیل کود کی مختلف سرگرمیوں میں مصروف ہوتے تھے لیکن کورنا وائرس اور لاک ڈاون کی وجہ سے کھیل سرگرمیاں بھی متاثر ہوئیں۔ تاہم کورنا وائرس کے دوران وادی کشمیر کے نوجوانوں میں اب پہاڑوں پر ٹریکنگ کرنے کا رجحان بڑھنےلگا ہے۔ ان دنوں نوجوان کھیل کود کے شوق کو پورا کرنے ،کورنا وائرس اور لاک ڈاون سے گھروں کے اندر بور ہونے سے بچنےکے لئےاب مختلف مقامات پر ٹریکنگ کررہے ہیں۔

شہرہ آفاق سیاحتی مقام گلمرگ ،درنگ،دنواس،بابا ریشی اورد یگر مقامات پر ان دنوں نوجوان خوب ٹریکنگ کررہےہیں۔ وادی کشمیر میں مختلف علاقوں کے نوجوان صبح سویرےسے ہی اونچے اونچے پہاڑوں کی جانب ٹریکنگ کرنے کے لئے رخ کر رہے ہیں۔ یہ نوجوان کئی کئی کلو میٹرتک کاپیدل سفر اونچی اونچی پہاڑیوں پر کررہے ہیں۔ کچھ نوجوانوں کا ٹریکنگ کا یہ سفر کئی دنوں پر مشتمل ہوتا ہے، یہ نوجوان رات کے دوران قیام کرنے کے لئےعارضی خیمےاور کھانے پینے کے اشیاء بھی اپنے ساتھ لئے ہوتے ہیں۔محمد رفیق حرہ نامی نوجوان نے نیوز18اردو کو بتایا کہ کوروناوائرس اور لاک ڈاؤن کی وجہ سےوہ اپنے گھر میں رہ کر ذہنی تناؤ کا شکار ہوگئے ہیں اورکافی بوریت محوس کررہے ہیں۔ اس وباء کی وجہ سے نہ ہی وہ ورزش کرپاتے ہیں نہ ہی کھیل سکتے ہیں۔ یہی حال ان کے دیگردوستوں کا بھی ہے۔ لاک ڈاون کی وجہ سے کھیل سرگرمیاں بحال نہیں ہوپائیں اسی لئے اب انہوں نے ٹریکنگ کرنا شروع کیا۔


عارف حسین بانکا نامی ایک اور نوجوان نے نیوز18 اردو کو بتایا کہ لاک ڈاؤن کے دوران گھروں کے اندر رہنے سے وہ اپاہج جیسے ہوگئے۔ انہوں نے بتایا کہ ان کےساتھ دیگر دوستوں نے جسمانی اور ذہنی طور پرتروتازہ و مضبوط رہنے کے لئےفی الحال کھیل کود کے بجائےٹریکنگ کا سہار ا لیا۔ وہ ہر ہفتےایک روز کی ٹریکنگ کے لئے ایک نئی جگہ کا تعین کرتے ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ وہ وادی کشمیر کے تمام پہاڑوں پر ٹریکنگ کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔


یہ بات تو واضح ہے کہ کشمیراپنی بے پناہ قدرتی حسن سے مالا مال ہے ٹریکنگ کے دوران نوجوانوں کی نہ صرف جسمانی ورزش ہوتی ہے بلکہ وہ قدرتی خوبصورتی سےجیسے پہاڑوں، آبشاروں کا خوب لطف لے رہے ہیں۔ اس دوران یہ نوجوان قدرتی خوبصورتی کی عکس بند بھی کررہے ہیں۔ وادی کے نوجوان دعا گو ہیں کہ کورناوائرس جیسی مہلک وباء جلد ختم ہو تاکہ کھل سرگرمیاں دوبارہ بحال ہوسکیں ۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jul 23, 2020 03:45 PM IST