ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دستور ہند کے مصنف و علمبردار کو پیش کیا گیا خراج عقیدت، بابا صاحب بھیم راو امبیڈکر کی خدمات کا اعتراف

دستورِ ہند کے مصنف، آزاد بھارت کے پہلے وزیر قانون بابا صاحب بھیم راو امبیڈ کر کی 65 ویں برسی کے موقع پر انہیں لکھنئو میں زبردست خراج عقیدت پیش کیا گیا۔

  • Share this:
دستور ہند کے مصنف و علمبردار کو پیش کیا گیا خراج عقیدت، بابا صاحب بھیم راو امبیڈکر کی خدمات کا اعتراف
دستورِ ہند کے مصنف، آزاد بھارت کے پہلے وزیر قانون بابا صاحب بھیم راو امبیڈ کر کی 65 ویں برسی کے موقع پر انہیں لکھنئو میں زبردست خراج عقیدت پیش کیا گیا۔

دستورِ ہند کے مصنف، آزاد بھارت کے پہلے وزیر قانون بابا صاحب بھیم راو امبیڈ کر کی 65 ویں برسی کے موقع پر انہیں لکھنئو میں زبردست خراج عقیدت پیش کیا گیا۔ لکھنئو کے گومتی نگر واقع بھیم راو امبیڈ کراحاطے میں نصب مجسمے کی گل پوشی بھی کی گئی اور بہوجن سماج پارٹی کے اہم قائدین نے ان کی غیر معمولی خدمات کا ذکر کرتے ہوئے بابا صاحب کے بنائے گئے اصولوں ضابطوں اور قوانین کی پاسداری کا عہد بھی لیا۔ اس موقع پر معروف سیاسی لیڈر اور سماجی کارکن صلاح الدین صدیقی نے کہا کہ بابا صاحب بھیم راو جی صرف ہمارے ملک کے دستور کے مصنف و نگہبان ہی نہیں بلکہ ایک سیاسی رہنما ،فلسفی ، مصلح بدھ مت، ماہر اقتصادیات اور کمزوروں ،مجبوروں اور پسماندہ لوگوں کے مسیحا بھی تھے۔


اس ملک اور ملک کے آئین و دستور کے تحفظ کے لئے بابا صاحب کی تعلیمات پر عمل کرنا ناگزیر ہے ہم انہیں خراج عقیدت اور خراج محبت پیش کرتے ہوئے ان کی عظیم خدمات کو سلام پیش کرتے ہیں ۔اس موقع پر ممبر آف پارلیمنٹ ڈاکٹر اشوک سدھارتھ نے کہا کہ ملک کو بچانے کے کئے سنویدھان کو بچانا ضروری ہے اور یہ صرف بابا صاحب کے احکامات پر عمل پیرا ہوکر ہی ممکن ہوسکتا ہے ۔سابق ایم ایل سی نوشاد علی نے بھی بابا صاحب کے مجسمے کی گل پوشی کرنے کے بعد انہیں محبتوں کا خراج پیش کیا۔ملک کے موجودہ سیاسی اور اقتصادی تناظر پر اظہار خیال کرتے ہوئے سابق ریاستی وزیر صلاح الدین صدیقی نے یہ بھی کہا کہ اگر بھٹکے ہوئے ارباب سیاست نے بابا صاحب کی سیاسی اور اقتصادی پالیسیوں سے استفادہ کیا ہوتا تو ملک سونے کی چڑیا ہوتا ، غریبی کا نام و نشان مٹ چکا ہوتا اور اس میں منفی سیاست کے رجحان بھی نہ سامنے آئے ہوتے۔


صلاح الدین صدیقی مانتے ہیں کہ صرف بہوجن سماج پارٹی ہی ایسی سیاسی جماعت ہے جسنے بابا صاحب کے ذریعے بنائے گئے دستور پر مکمل طور پر عمل پیرا ہونے کی کوشش کی ہے پارٹی سربراہ بہن مایاوتی جی کی جانب سے بھی ہمیں سدا یہی احکامات دئے جاتے رہے ہیں کہ ملک کو صرف بابا صاحب کے نقش قدم پر چل کر ہی بچایا جاسکتا ہے-آج ان کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے ہم یہ عہد کرتے ہیں کہ اس ملک اور ملک لے دستور کے تحفظ ، دلتوں کمزوروں پچھڑوں اور سبھی مستحصل لوگوں کے حقوق کی بازیابی کے لئے آخری سانس تک جد وجہد کرتے رہیں گے۔

Published by: sana Naeem
First published: Dec 06, 2020 03:42 PM IST