உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    غداری کے مقدمہ میں عبوری ضمانت پر رہا ہونے والے جے این یو کے طالب علم عمر خالد ایمس میں داخل

    نئی دہلی۔ غداری کے مقدمہ میں عبوری ضمانت پر رہا ہونے والے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے طالب علم عمر خالد کی طبیعت گزشتہ گیارہ دنوں سے بھوک ہڑتال پر رہنے کی وجہ سے آج اچانک بگڑ گئی، اس لئے اس کو آج آل انڈیا انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنس (ایمس) میں داخل کرایا گیا۔

    نئی دہلی۔ غداری کے مقدمہ میں عبوری ضمانت پر رہا ہونے والے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے طالب علم عمر خالد کی طبیعت گزشتہ گیارہ دنوں سے بھوک ہڑتال پر رہنے کی وجہ سے آج اچانک بگڑ گئی، اس لئے اس کو آج آل انڈیا انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنس (ایمس) میں داخل کرایا گیا۔

    نئی دہلی۔ غداری کے مقدمہ میں عبوری ضمانت پر رہا ہونے والے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے طالب علم عمر خالد کی طبیعت گزشتہ گیارہ دنوں سے بھوک ہڑتال پر رہنے کی وجہ سے آج اچانک بگڑ گئی، اس لئے اس کو آج آل انڈیا انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنس (ایمس) میں داخل کرایا گیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔ غداری کے مقدمہ میں عبوری ضمانت پر رہا ہونے والے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے طالب علم عمر خالد کی طبیعت گزشتہ گیارہ دنوں سے بھوک ہڑتال پر رہنے کی وجہ سے آج اچانک بگڑ گئی، اس لئے اس کو آج آل انڈیا انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنس (ایمس) میں داخل کرایا گیا اور اس طرح جے این یو ایس یو کے صدر کنہیا کمار کے بعد اس کو بھی بھوک ہڑتال سے الگ ہونا پڑا۔ قابل ذکر ہے کہ یونیورسٹی کیمپس میں 9 فروری کو منعقد متنازعہ پروگرام میں حصہ لینے کی وجہ سے یونیورسٹی انتظامیہ کے ذریعہ یونیورسٹی سے اخراج کے فیصلے کی مخالفت میں بھوک ہڑتال پر بیٹھے عمر خالد کے جسم میں شوگر، سوڈیم اور پوٹاشیم کی سطح کافی کم ہوگئي تھی، جس کی وجہ سے اسے آج علی الصباح ایمس میں داخل کرایا گیا۔


      یونیورسٹی طلبہ یونین کی جانب سے جاری بیان کے مطابق صحت خراب ہو جانے کی وجہ سے عمر خالد کو اپنی  بھوک ہڑتال درمیان میں ہی ختم کرنی پڑی۔ یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے معتوب کئے جانے کی مخالفت میں عمر خالد اور کنہیا کے ساتھ بھوک ہڑتال پر بیٹھے سات طلبہ نے بھوک ہڑتال ختم کر دی ہے جبکہ باقی 13 اب بھی بھوک ہڑتال جاری رکھے ہوئے ہیں۔


      دریں اثناء، یونیورسٹی انتظامیہ نے بھوک ہڑتال کر نے والے طالب علموں سے کہا ہے کہ وہ اپنے مطالبات کو آئینی طورپر رکھیں اور اس کے لئے بیرونی عناصر کو یونیورسٹی احاطے کے اندر بلانے کا کام نہ کریں۔

      First published: