ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

زندہ ہے انڈرورلڈ ڈان چھوٹا راجن ، ایمس نے موت کی خبروں کی تردید کی

Chhota Rajan Dies: چھوٹا راجن 2015 میں انڈونیشیا کے بالی سے خودسپردگی کے بعد گرفتاری کے بعد سے دہلی کے تہاڑ جیل میں بند تھا ۔ تہاڑ جیل انتظامیہ نے پیر کو دہلی کی ایک سیشن عدالت کو چھوٹا راجن کے متاثر ہونے کی جانکاری دی تھی ۔

  • Share this:
زندہ ہے انڈرورلڈ ڈان چھوٹا راجن ، ایمس نے موت کی خبروں کی تردید کی
انڈرورلڈ ڈان چھوٹا راجن کی کورونا وائرس سے موت ، دہلی کے ایمس میں تھا بھرتی : رپورٹ

نئی دہلی : ایمس انتظامیہ نے کورونا وائرس کے متاثر انڈرورلڈ ڈان راجیندر نکھلجے عرف چھوٹا راجن کی موت کی خبروں کی تردید کی ہے ۔ اس سے پہلے رپورٹس میں یہ خبر سامنے آئی تھی کہ چھوٹا راجن کی کورونا وائرس سے موت ہوگئی ہے ۔ چھوٹا راجن کو کورونا وائرس سے متاثر ہونے کے بعد دہلی کے ایمس میں بھرتی کرایا گیا ہے ، جہاں اس کا علاج چل رہا ہے ۔61 سالہ چھوٹا راجن 2015 میں انڈونیشیا کے بالی سے خودسپردگی کے بعد گرفتاری کے بعد سے دہلی کے تہاڑ جیل میں بند تھا ۔ تہاڑ جیل انتظامیہ نے پیر کو دہلی کی ایک سیشن عدالت کو چھوٹا راجن کے متاثر ہونے کی جانکاری دی تھی ۔


ممبئی میں چھوٹا راجن کے خلاف درج سبھی معاملات سی بی آئی کو منتقل کردئے گئے تھے اور اس پر مقدمہ چلانے کیلئے خصوصی عدالت قائم کی گئی تھی ۔ تہاڑ کے اسسٹنٹ جیلر نے پیر کو فون کے ذریعہ سیشن عدالت کو بتایا تھا کہ وہ ایک معاملہ کی سماعت کے سلسلے میں ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ راجن کو عدالت میں پیش نہیں کرسکتے ہیں ، کیونکہ گینگسٹر کورونا سے متاثر ہوگیا ہے اور اس کو ایمس میں بھرتی کرایا گیا ہے ۔


اپریل کے آخری ہفتہ میں کورونا سے متاثر پائے جانے کے بعد چھوٹا راجن کو دہلی کے ایمس میں بھرتی کرایا گیا تھا ۔ چھوٹا راجن کے خلاف اغوا ، قتل ، اسمگلنگ جیسے کئی معاملات سمیت 70 سے زیادہ مقدمات درج تھے ۔


وہیں سی بی آئی کی اسپیشل کورٹ نے 1993 ممبئی سلسلہ وار دھماکہ معاملہ کے ملزم حنیف کڑاوالا کے قتل کے معاملہ میں چھوٹا راجن اور اس کے ساتھی کو 22 اپریل کو ہی بری کیا تھا ۔ دہشت گردانہ حملہ کے اہم سرغنہ ٹائیگر مینن کی ہدایت پر کڑاوالا ممبئی میں ہتھیار لے کر آیا تھا ، جس کا استعمال 1993 کے دھماکوں میں ہوا ۔ حملوں میں 250 سے زیادہ لوگ مارے گئے تھے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 07, 2021 04:52 PM IST