உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سی اے اے احتجاج پرردعمل:امت شاہ نے کیا دعویٰ،کہا۔۔ زیادہ ترمظاہرے ہیں سیاسی

    میں اتفاق کرتا ہوں کہ زیادہ تر سیاسی مظاہرے ہوتے ہیں۔ کچھ لوگوں کو گمراہ کیاجارہاہے لیکن ہم ان کو راضی کرنے کی کوشش کررہے ہیں: امت شاہ

    میں اتفاق کرتا ہوں کہ زیادہ تر سیاسی مظاہرے ہوتے ہیں۔ کچھ لوگوں کو گمراہ کیاجارہاہے لیکن ہم ان کو راضی کرنے کی کوشش کررہے ہیں: امت شاہ

    میں اتفاق کرتا ہوں کہ زیادہ تر سیاسی مظاہرے ہوتے ہیں۔ کچھ لوگوں کو گمراہ کیاجارہاہے لیکن ہم ان کو راضی کرنے کی کوشش کررہے ہیں: امت شاہ

    • Share this:
      مرکزی وزیرداخلہ امت شاہ نے شہریت ترمیمی قانون کے خلاف ہونے والے مظاہروں کو 'زیادہ تر سیاسی' قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس نئے قانون کی وجہ سے کوئی بھی ہندوستانی اپنی شہریت سے محروم نہیں ہوگا۔ شاہ نے کانگریس لیڈر راہول گاندھی اور پرینکا گاندھی کو چیلنج کیا کہ وہ سی اے اے میں ایک ہی شق دکھائے جس کے تحت کسی کی ہندوستانی شہریت ختم ہورہی ہے۔

      انہوں نے ایک نیوزچینل کو بتایا ، 'میں اتفاق کرتا ہوں کہ زیادہ تر سیاسی مظاہرے ہوتے ہیں۔ کچھ لوگوں کو گمراہ کیاجارہاہے لیکن ہم ان کو راضی کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ وزیرداخلہ نے کہا ، سی اے اے کے تحت حکومت پاکستان، افغانستان اوربنگلہ دیش کے مظلوم اقلیتوں کو شہریت دینا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہا، 'میں واضح طورپرکہنا چاہتا ہوں کہ سی اے اے میں شہریت واپس لینے کےمتعلق کوئی قواعد ہی نہیں ہے۔وزیر داخلہ نے کہا کہ سی اے اے کے تحت حکومت ان تینوں ممالک کے مہاجرین کو شہریت دی جائیگی۔



      امت شاہ نے کہا میں یقین کے ساتھ کہتا ہوں کہ یہ مہاجر بھائی ، جو ہندوستان آئے ہیں ، ہمارے ہیں اور حکومت ہند کی ذمہ داری ہے کہ وہ انہیں ہندوستان میں ایک قابل احترام مقام فراہم کرے۔' وزیر داخلہ نے کہا کہ مردم شماری 2021 اور قومی آبادی کے رجسٹر کا قومی سیول رجسٹر سے کوئی تعلق نہیں ہے۔



      انہوں نے کہا کہ مردم شماری اور این پی آر کی کاررائی ملک میں ہر10 سال ایک بارمنعقد ہوتی ہے اور اس بار بھی 10سال بعد ہی حکومت این پی آرمنعقد کررہی ہے۔ کانگریس نے یہ کام بارہا کیا ہے اور آج وہ اس کی مخالفت کررہی ہے۔ بہار اسمبلی انتخابات سے متعلق ایک سوال کے جواب میں ، شاہ نے کہا ، "بہار میں ، ہم نتیش کمار کی سربراہی میں الیکشن لڑیں گے ، اس میں کوئی الجھن نہیں ہے۔"
      First published: