ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر آپسی رضامندی یا سپریم کورٹ کے حکم سے ہونی چاہئے : مختار عباس نقوی

اقلیتوں کی فلاح وبہبود اور پارلیمانی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے کہا ہے کہ اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر آپسی رضامندی یا سپریم کورٹ کے حکم سے ہونا چاہئے۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 10, 2017 08:38 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر آپسی رضامندی یا سپریم کورٹ کے حکم سے ہونی چاہئے : مختار عباس نقوی
مرکزی وزیر مختار عباس نقوی : فائل فوٹو۔

لکھنؤ: اقلیتوں کی فلاح وبہبود اور پارلیمانی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے کہا ہے کہ اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر آپسی رضامندی یا سپریم کورٹ کے حکم سے ہونا چاہئے۔مسٹر نقوی نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے اس کو کبھی سیاسی ایشو نہیں مانا۔ بی جے پی کا واضح طو رپر کہنا ہے کہ اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر ہو لیکن آپسی رضامندی یا سپریم کورٹ کے حکم سے ہو۔

انہوں نے کہا کہ مندر کی تعمیر عقیدت کا مسئلہ ہے، اس میں سیاست نہیں ہونی چاہئے۔ لوگوں کو آپسی رضامندی یا سپریم کورٹ کے حکم کا انتظار کرنا چاہئے۔ کشمیر اوراجودھیا کے مندر۔مسجد مسئلہ کے لئےکانگریس کو اس کا ذمہ دار قرار دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ وقت پر صحیح فیصلہ نہ لئے جانے کی وجہ سے یہ مسئلہ بڑا ہوگیا۔

First published: Nov 10, 2017 08:03 PM IST