ہوم » نیوز » امراوتی

بی جے پی لیڈر کے ٹویٹ سے ہلچل:یوگی تک چاہتے تھے سینگر کی گرفتاری،"ایک بڑے لیڈر"نے پھنسایا معاملہ

اناؤ عصمت دری معاملے میں بی جے پی ایم ایل اے کی فرگتاری کو لیکر ریاستی حکومت نے صاف کر دیا ہے کہ معاملے میں اب سی بی آئی ہی فیصلہ کرے گی۔یو پی پولیس ان کی گرفتاری نہیں کرنے جا رہی ہے۔

  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
بی جے پی لیڈر کے ٹویٹ سے ہلچل:یوگی تک چاہتے تھے سینگر کی گرفتاری،
آئی پی سنگھ :فائل فوٹو

اناؤ عصمت دری معاملے میں بی جے پی ایم ایل اے کی گرفتاری کو لیکر ریاستی حکومت نے صاف کر دیا ہے کہ معاملے میں اب سی بی آئی ہی فیصلہ کرے گی۔یو پی پولیس ان کی گرفتاری نہیں کرنے جا رہی ہے۔اس سے پہلے بدھ کی رات کو بی جے پی لیڈر آئی پی سنگھ کے ٹویٹ نے معاملے کو الگ ہی رخ دے دیا ہےانہوں نے لکھا ہیکہ معاملہ سامنے آنے کے بعد سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ نے کلدیپ سینگر کو گرفتار کرنے کا فیصلہ لے لیا تھا۔ان کی سی ایم دفتر میں گرفتاری ہوتی۔یہی نہیں سی ایم یوگی نے معاملے میں اناؤ کے ایس پی کو بھی معطل کرنے کا فیصلہ کر لیا تھا لیکن اچانک ایک بڑے شخص کے دستخط سے معاملہ ٹل گیا۔جس کا خمیازہ پوری پارٹی نے بھکتا۔حالانکہ یہ ایک بڑے لیڈر کون ہیں؟۔آئی پی  سنگھ نے اس کاخلاصہ نہیں کیا۔


ادھر آئی پی سنگھ کے اس ٹویٹ سے بی جے پی نے کنارہ اختیار کر لیا ہے۔بی جے پی  ترجمان راکیش تریپاٹھی نے کہا کہ "آئی پی سنگھ پارٹی کسی عہدے پر نہیں ہے۔  وہ کارکن ضرور ہیں۔سی ایم کیا طے کرتے ہیں،کیا فیصلہ لیتے ہیں۔آئی پی سنگھ کو اسے جاننے کا حق نہیں  ہے۔انہیں آئی پی سنگھ کو بتانے کی ضرورت نہیں ہے۔آئی پی سنگھ کا دعوی مکمل طور پر من گڑھت ہے۔ان کی یہ ذاتی رائے ہے،۔یوپی میں قانون کا راج ہے۔یہاں کسی کا بھی دباؤ قانون کے بیچ میں نہیں آتا"۔


پولیس کسی کو بچانے کی کوشش نہیں کر رہی:یو پی ڈی جے پی

وہیں جمعرات کو صبح داخلی امور کے چیف سکریٹری اروند کامر اور ڈی جی پی کی مشترکہ کانفرنس میں کہا گیا ہیکہ پولیس کسی کو بھی بچانے کی کوشش نہیں کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہیکہ فریقین کی سن کر کارروائی ہو رہی ہے۔سبھی معاملے سیبی آئی کو ٹرانسفر کئے جا رہے ہیں ۔اب فیصلہ سی بی آئی کرے گی۔کہ ایم ایل سئ کی گرفتاری کرنی ہے یا نہیں۔

 

First published: Apr 12, 2018 02:13 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading