ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اناؤ ریپ کیس:ملزم بی جے پی ایم ایل اے کی گرفتاری پر فیصلہ سی بی آئی کرے گی:ڈی جی پی

اناؤ ریپ معاملے میں ملزم بی جے پی ایم ایل اے کلدیپ سینگرکی گرفتاری کو لیکر یوپیپولیس کے ڈائریکٹر جنرل اوپی سنگھ نے صاف کر دیا ہے کہ فی الحال انہیں گرفتار نہیں کیاجائیگا۔ایم ایل اے کی گرفتاری پر فیصلہ سی بی آئی کرے گی۔

  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اناؤ ریپ کیس:ملزم بی جے پی ایم ایل اے کی گرفتاری پر فیصلہ سی بی آئی کرے گی:ڈی جی پی
کلدیپ سنگھ سینگر (فائل فوٹو)۔

اناؤ ریپ معاملے میں ملزم بی جے پی ایم ایل اے کلدیپ سینگرکی گرفتاری کو لیکر یوپی پولیس کے ڈائریکٹر جنرل اوپی سنگھ نے صاف کر دیا ہے کہ فی الحال انہیں گرفتار نہیں کیاجائیگا۔ایم ایل اے کی گرفتاری پر فیصلہ سی بی آئی کرے گی۔داخلی امور کے چیف سکریٹری اروند کمار اور ڈی جی پی کی مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا گیا کہ پولیس کو بچانے کی کوشش نہیں کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ "ہماری کوشش ہے کہ فریقین کو سن کر کارروائی ہو۔سبھی معاملے سی بی آئی کو ٹرانسفر کئے جا رہے ہیں۔اب سی بی آئی کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ ایم ایل اے کی گرفتاری کرنی ہے یا نہیں"۔


پریس کانفرنس کو خطاب کرتے ہوئے ڈی جی پی سنگھ نے کہا کہ ایم ایل اے ابھی ملزم ہیں۔قصوروار ثابت نہیں ہوئے ہیں۔پولیس کسی کا بچاؤ نہیں کر رہی ہے۔ایس آئی ٹی کی رپورٹ کے بعد کارروائی کی گئی ہے۔اب معاملے میں سی بی آئی جانچ کی سفارش کی گئی ہے۔سبھی دستاویزات سی بی آئی کو سونپے جائیں گے۔


ڈی جی پی نے کہا کہ ایس آئی ٹی پورے معاملے میں ابھی  تجزیہ کر رہی ہے اور ثبوتوں کے جٹانے کا کام جاری ہے۔ابھی ایم ایل اے کے خلاف ثبوت نہیں ملے ہیں۔ثبوت ملتے ہی کارروائی کی جائے گی۔وہیں متاثرہ اور اس کے چاچا نے ڈی جیپی کی پریس کانفرنس کو ایک اسکرپٹ قرار دیا تھا۔ان کا کہنا ہیکہ ایف آئی آر لکھے جانے کے بعد بھی کارروائی نہیں ہوگی۔


واضح ہو کہ ڈی جی پی اور داخلی امور کے چیف سکریٹری کا بیان صاف کرتا ہے کہ کلدیپ سنگھ سینگر کی نہ تو گرفترای ہوگی اور نہ ہی پوچھ تاچھ ہوگی۔کیونکہ سی بی آئی کو کیس ہینڈ آور کرنے کا ایک عمل ہے ۔جس میں وقت بھی لگ سکتا ہے ۔یعنی تب تک ایم ایل اے محفوظ ہیں۔اس کے ساتھ ہی یوپی پولیس نے پورے معاملے سے اپنا پلہ جھاڑ لیا ہے۔
First published: Apr 12, 2018 11:30 AM IST