ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اناو آبروریزی کیس کے ملزم بی جے پی ممبر اسمبلی سینگر کی حمایت میں ریلی ، لوگوں نے بتایا بے قصور

آبروریزی کے الزام میں سی بی آئی کی گرفت میں آئے اناو کے بانگرمئو سے بی جے پی کے ممبر اسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر کی حمایت میں ضلع بھر میں لوگوں نے امن مارچ نکالا ۔

  • Share this:
اناو آبروریزی کیس کے ملزم بی جے پی ممبر اسمبلی سینگر کی حمایت میں ریلی ، لوگوں نے بتایا بے قصور
لوگ ممبر اسمبلی کی حمایت میں سڑکوں پر اترے۔

اناو : آبروریزی کے الزام میں سی بی آئی کی گرفت میں آئے اناو کے بانگرمئو سے بی جے پی کے ممبر اسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر کی حمایت میں ضلع بھر میں لوگوں نے امن مارچ نکالا ۔ مارچ میں شامل لوگ ممبر اسمبلی پر عائد الزامات کو سرے سے خارج کرتے ہوئے اسے سازش قرار دے رہے ہیں۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ سیاسی سازش اور خاندانی رنجش کی وجہ سے ممبر اسمبلی کو پھنسایا جارہا ہے۔ پیر کو ممبر اسمبلی کی حمایت میں ضلع میں کئی مقامات پر مارچ نکالا گیا۔ اس مارچ میں مردوں کے ساتھ ساتھ بڑی تعداد میں خواتین بھی موجود رہیں۔

بانگرمئو ، صفی پور اور بیگھا پور سمیت کئی علاقوں میں نکالے گئے جلوس میں لوگوں نے اپنے ہاتھوں میں تختیاں لے رکھی تھیں ، جس پر لکھا تھا کہ ہمار ممبر اسمبلی بے قصور ہے۔ بانگر مئو میں ضلع پنچایت کے ممبر راگھویندر سنگھ کی قیاد ت میں گنج مرادآباد میں ایک جلوس نکالا گیا ، اس میں عوامی نمائندوں سمیت بڑی تعداد میں دیہی لوگ شریک ہوئے۔

لوگوں کا کہنا ہے کہ ممبر اسمبلی بے قصور ہے ۔ ان کے خلاف سیاسی سازش ہورہی ہے۔ انہوں نے سی بی آئی اور حکومت سے پورے معاملہ میں غیر جانبدار جانچ کرکے انصاف کرنے کی فریاد کی۔

اسی طرح صفی پور میں بھی لوگ ممبر اسمبلی کی حمایت میں سڑکوں پر اترے۔ نگر پنچایت صدر انج کمار دیکشت کی قیادت میں کئی عوامی نمائندوں سمیت علاقائی لوگوں نے امن مارچ میں حصہ لیا۔ جلوس میں شامل لوگوں کا کہنا تھا کہ آج سے پہلے ممبر اسمبلی پر اس طرح کا کوئی الزام نہیں لگا، یہ ممبر اسمبلی کے خلاف ایک سازش ہے ، جس کی بھی جانچ ہونی چاہئے۔


unnao-possession
غور طلب ہے کہ آبروریزی اور متاثرہ لڑکی کے والد کے قتل کے الزام میں ممبر اسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر ، ان کے بھائی اتل سنگھ ، معاون ششی سنگھ سمیت دیگر ملزمین جیل میں بند ہیں ۔ سی بی آئی اپنی ابتدائی جانچ کرچکی ہے اور جلد ہی اسے عدالت میں پیش کرے گی۔
First published: Apr 23, 2018 06:21 PM IST