ہوم » نیوز » امراوتی

اناو عصمت دری معاملہ: متاثرہ کا اہل خانہ انصاف کے لئے پہنچا ہائی کورٹ

اناو عصمت دری معاملہ کو لے کر متاثرہ کا اہل خانہ الہ آباد ہائی کورٹ پہنچا ہے۔ اناو عصمت دری معاملے کے کئی ملزم اب بھی پولیس کی گرفت سے باہر ہیں۔

  • Share this:
اناو عصمت دری معاملہ: متاثرہ کا اہل خانہ انصاف کے لئے پہنچا ہائی کورٹ
علام

اناو عصمت دری معاملہ کو لے کر متاثرہ کا اہل خانہ الہ آباد ہائی کورٹ پہنچا ہے۔ اناو عصمت دری معاملے کے کئی ملزم اب بھی پولیس کی گرفت سے باہر ہیں۔ ملزمین کی گرفتاری نہ ہونے سے ناراض خاندان الہ آباد ہائی کورٹ میں عرضی لگانے پہنچا ہے۔ متاثرہ کے گھروالوں کا کہنا ہے کہ متاثرہ کے والد کے قتل کے بعد پولیس کو دی گئی تحریر میں کئی ملزم ایسے ہیں، جن کی گرفتاری نہیں ہوئی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ پولیس نے تحریر بھی اپنی مرضی کے مطابق لکھی ہے۔ متاثرہ کے والد کے قتل معاملے میں ملزم پولس افسران پر بھی کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔


چارجون 2017 کو ماکھی تھانہ علاقہ کے گاوں سے 17 سال کی بچی کو گاوں کے ہی شبھم اور اس کا ساتھی کانپور کے چوبے پورباشندہ اودھیش تیوار اغوا کرلے گئے۔ متاثرہ کی ماں نے ماکھی تھانہ میں معاملے کی تحریر دی، جس میں ممبراسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر پر پڑوس کی ایک خاتون کے ذریعہ بہانے سے گھر سے بلاکر عصمت دری کرنے اور اس کے بعد اس کے غنڈوں کے ذریعہ عصمت دری کرنے کا الزام لگایا، لیکن پولس نے تب رپورٹ درج نہیں کی۔


قابل ذکر ہے کہ 11 جون 2017 کو متاثرہ نے عدالت کی پناہ لی۔ کورٹ کے حکم پر ملزم اودھیش تیواری، شبھم تیواری ودیگر کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا، لیکن مقدمہ میں ممبراسمبلی اور ملزم خاتون کا نام نہیں تھا۔ 3 اپریل 2018 کو متاثرہ نے خاندان سمیت وزیراعلیٰ کی رہائش گاہ کے باہر خود کشی کرنے کی کوشش کی۔ 9 اپریل کو متاثرہ کے والد کی اناو جیل میں موت ہوگئی، جس کے بعد 10 اپریل کو ممبراسمبلی کے بھائی اتل سنگھ کو گرفتار کیا گیا۔


 

 
First published: May 01, 2018 05:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading