ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہندوستان نے اقوام متحدہ میں دنیا کو دیا پیغام ، تو پاکستان نے پھر الاپا کشمیر کا راگ

UNSC India Pakistan: آرٹیکل 370 ہٹانے کے بعد پاکستان نے پوری دنیا میں گھوم گھوم کر ہندوستان کے خلاف پروپیگنڈہ پھیلانے کی کوشش کی ، لیکن اس کو کہیں سے مدد نہیں ملی ۔ اب اس نے منگل کو ہندوستان پر اس کے پڑوس میں تعمیری اور با معنی بات چیت کی کسی بھی کوشش پر مسلسل پانی پھیرنے کا الزام لگایا ۔

  • Share this:
ہندوستان نے اقوام متحدہ میں دنیا کو دیا پیغام ، تو پاکستان نے پھر الاپا کشمیر کا راگ
ہندوستان نے اقوام متحدہ میں دنیا کو دیا پیغام ، تو پاکستان نے پھر الاپا کشمیر کا راگ

نئی دہلی : ہندوستان کے خلاف پڑوسی پاکستان اپنی بیجا حرکتوں سے کبھی باز نہیں آتا ہے ۔ اقوام متحدہ سیکورٹی کونسل کی صدارت کی شروعات کرتے وقت ہندوستان نے دنیا کو تین پیغام دئے ، لیکن دہشت گردوں کا پناہ گاہ ملک پاکستان کو یہ پیغام پسند نہیں آیا اور وہ الٹے کشمیر کا راگ الاپنے لگا ۔ دراصل پانچ اگست 2019 کو ہندوستان نے جموں و کشمیر سے آرٹیکل 370 کو ختم کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور پڑوسی ملک اس کو لے کر ابھی بھی شور مچاتے رہتا ہے ۔


آرٹیکل 370 ہٹانے کے بعد پاکستان نے پوری دنیا میں گھوم گھوم کر ہندوستان کے خلاف پروپیگنڈہ پھیلانے کی کوشش کی ، لیکن اس کو کہیں سے مدد نہیں ملی ۔ اب اس نے منگل کو ہندوستان پر اس کے پڑوس میں تعمیری اور با معنی بات چیت کی کسی بھی کوشش پر مسلسل پانی پھیرنے کا الزام لگایا ۔ ہندوستان کے وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے اقوام متحدہ سیکورٹی کونسل کی صدارت کے دوران ہندوستان کی ترجیحات کے سلسلہ میں ایک ٹویٹ کیا تھا ، جس کے بارے میں پوچھے جانے پر پاکستان کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے یہ بات کہی ۔


ہندوستان کے وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے سیکورٹی کونسل کی صدارت کے دوران ہندوستان کی تین ترجیحات بتائیں ، جن میں صبر و تحمل کی آواز، بات چیت کی وکالت اور بین الاقوامی قوانین کی حمایت شامل ہے ۔ اقوام متحدہ سیکورٹی کونسل کی اگست مہینے کی صدارت ہندوستان کے پاس ہے ۔ جے شنکر نے اتوار کو ٹویٹ کیا تھا کہ اگست کیلئے اقوام متحدہ سیکورٹی کونسل کی صدارت سنبھالنے کے ساتھ ہم دیگر ممالک کے ساتھ کام کرنے کیلئے پرجوش ہیں ۔


ایس جے شنکر کے ٹویٹ پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے پاکستانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ دنیا کو صبر و تحمل کی نصیحت کرنے سے پہلے ہندوستان اپنی داخلی حالات کو درست کرے ۔ انہوں نے دعوی کیا کہ ہندوستان نے اپنے پڑوس میں تعمیری اور بامعنی بات چیت کی کسی بھی کوشش پر مسلسل پانی پھیرا ہے ۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ پانچ اگست 2019 کے بعد سے ہندوستان کی کارروائی اقوام متحدہ چارٹر ، یو این ایس سی تجاویز اور چوتھے جنیوا کنوینشن سمیت بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Aug 03, 2021 11:57 PM IST