உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Yamuna: یمنا میں کشتی الٹنے سے 4 ہلاک، متعدد ڈوبنے کا خدشہ، سرچ آپریشن جاری

    انہوں نے حکام سے زخمیوں کو بہترین علاج کی فراہمی کو یقینی بنانے کو بھی کہا ہے۔

    انہوں نے حکام سے زخمیوں کو بہترین علاج کی فراہمی کو یقینی بنانے کو بھی کہا ہے۔

    پولیس کے مطابق یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب کشتی مارکا سے فتح پور ضلع کے جارولی گھاٹ جا رہی تھی۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ ابھینندن (Superintendent of police Abhinandan) نے بتایا کہ کشتی میں 30 سے ​​35 افراد سوار تھے۔

    • Share this:
      اتر پردیش کے بانڈہ میں جمعرات کو دریائے یمنا (Yamuna river) میں ایک کشتی الٹنے سے چار افراد ڈوب گئے جبکہ متعدد لاپتہ ہونے کا خدشہ ہے۔ پولیس نے بتایا کہ کل 15 لوگوں کو بچا لیا گیا ہے جب کہ حادثہ کے وقت سات سے آٹھ تیر کر محفوظ مقام پر پہنچ گئے تھے۔ پولیس نے مزید کہا کہ بڑے پیمانے پر تلاش اور بچاؤ آپریشن جاری ہے جبکہ این ڈی آر ایف اور ایس ڈی آر ایف کی ٹیمیں بھی اپنے راستے پر ہیں۔

      پولیس کے مطابق یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب کشتی مارکا سے فتح پور ضلع کے جارولی گھاٹ جا رہی تھی۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ ابھینندن (Superintendent of police Abhinandan) نے بتایا کہ کشتی میں 30 سے ​​35 افراد سوار تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ لاپتہ افراد کا سراغ لگانے کے لیے غوطہ خوروں کی مدد لی جا رہی ہے۔

      ایڈیشنل ایس پی لکشمی نواس مشرا نے بتایا کہ سات سے آٹھ لوگ تیر کر محفوظ مقام پر پہنچے اور بہت سے لوگوں کے ڈوب جانے کا خدشہ ہے۔ ایک سینئر اہلکار نے بتایا کہ اب تک چار لاشیں برآمد کی گئی ہیں۔ پولیس نے مزید کہا کہ کشتی مسافروں سے بھری ہوئی تھی جب سہ پہر تین بجے کے قریب تیز ہواؤں کے باعث الٹ گئی۔

      چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ (Yogi Adityanath) نے ضلع انتظامیہ کے سینئر افسران کو موقع پر پہنچنے اور راحت اور بچاؤ کاموں کی نگرانی کرنے کی ہدایت دی ہے۔ جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے چیف منسٹر نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ فوری طور پر این ڈی آر ایف (NDRF) اور ایس ڈی آر ایف (SDRF) کی ٹیموں کو موقع پر روانہ کریں۔

      یہ بھی پڑھئے:


      گیٹ 2023 نوٹیفکیشن، 30 اگست سے آن لائن رجسٹریشن، 4 فروری سے امتحان

      یہ بھی پڑھیں:

      MANUU Admission: اردو یونیورسٹی میں فاصلاتی کورسز میں داخلے کیلئے اعلامیہ جاری

      انہوں نے حکام سے زخمیوں کو بہترین علاج کی فراہمی کو یقینی بنانے کو بھی کہا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: