உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    UP Election: تیسرے مرحلہ میں 60.46% ووٹنگ، اکھلیش سمیت 627 امیدواروں کی قسمتEVM میں بند

    UP Election: تیسرے مرحلہ میں 60.46% ووٹنگ، اکھلیش سمیت 627 امیدواروں کی قسمتEVM میں بند

    UP Election: تیسرے مرحلہ میں 60.46% ووٹنگ، اکھلیش سمیت 627 امیدواروں کی قسمتEVM میں بند

    UP Assembly Election 2022: اتر پردیش اسمبلی انتخابات کے تیسرے مرحلے کے لئے ووٹنگ مکمل ہو گئی ہے۔ اس مرحلے میں 60.46 فیصد ووٹنگ ہوئی ہے جو کہ 2017 کے اسمبلی انتخابات سے کم ہے ۔

    • Share this:
      لکھنؤ : اتر پردیش اسمبلی انتخابات (UP Assembly Election 2022) کے تیسرے مرحلے کے لئے ووٹنگ مکمل ہو گئی ہے۔ اس مرحلے میں 60.46 فیصد ووٹنگ ہوئی ہے جو کہ 2017 کے اسمبلی انتخابات سے کم ہے ۔ بتا دیں کہ پچھلی مرتبہ اس مرحلے میں 62.21 فیصد ووٹ پڑے تھے۔ تاہم یوپی الیکشن کمیشن نے اس مرتبہ کے لئے حتمی اعداد و شمار جاری نہیں کئے ہیں۔ وہیں اس مرحلے میں اکھلیش یادو (Akhilesh Yadav) ، ایس پی سنگھ بگھیل، شیو پال سنگھ یادو، لیوس خورشید اور اسیم ارون سمیت یوگی کابینہ کے کئی وزراء کے ساتھ 627 امیدواروں (97 خواتین) کی قسمت ای وی ایم میں بند ہوگئی ہے ۔

      یوپی اسمبلی انتخابات کے تیسرے مرحلے میں یوپی کے 16 اضلاع کی 59 اسمبلی سیٹوں کے لئے ووٹنگ ہوئی ۔ اس میں ہاتھرس، ایٹہ، کاس گنج، فیروز آباد، مین پوری، کانپور، کانپور دیہات، اوریا، فرخ آباد، قنوج، اٹاوہ، جھانسی، جالون، للت پور، ہمیر پور اور مہوبہ شامل ہیں ۔

      وہیں وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ یوپی اسمبلی انتخابات 2022 کا تیسرا مرحلہ آج پرامن طریقے سے مکمل ہوا۔ حق رائے دہی استعمال کرنے والے تمام معزز ووٹروں کا تہہ دل سے شکریہ ۔ آپ کے ایک ووٹ نے خود کفیل اور محفوظ اتر پردیش کے عزم کو مضبوط کیا ہے ۔ بھارت ماتا کی جئے!!

      یوپی انتخابات کے تیسرے مرحلے میں شام 6 بجے تک للت پور میں ریکارڈ 72.96 فیصد پولنگ ہوئی ہے۔ وہیں کاس گنج میں 63.04 فیصد، جالون میں 59.96 فیصد، قنوج میں 61.56 فیصد، ہمیر پور میں 64.35 فیصد، مہوبہ میں 64.47 فیصد، فرخ آباد میں 63.85 فیصد، ایٹہ میں 65.58 فیصد، مین پوری میں 60.80 فیصد، اٹاوہ میں 60.35 فیصد ، اوریا میں 59.55 فیصد ، کانپور دیہات میں 60.48 فیصد، کانپور شہر میں 55.76 فیصد ، جھانسی میں 61.71 فیصد ، ہاتھرس میں 61.56  فیصد اور فیروز آباد میں 68.89 فیصد ووٹ پڑے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: