ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اب ملائم سنگھ نے کی حامیوں سے کانگریس کی 105 نشستوں پر انتخابات لڑنے کی اپیل

ملائم سنگھ یادو نے سماج وادی پارٹی -کانگریس اتحاد کے خلاف ایک مرتبہ پھر بیان دیا ہے۔ ملائم نے حامیوں سے ان 105 نشستوں پر لڑنے کی اپیل کی ہے ، جہاں کانگریس امیدوار کھڑے ہیں۔

  • Share this:
اب ملائم سنگھ نے کی حامیوں سے کانگریس کی 105 نشستوں پر انتخابات لڑنے کی اپیل
ملائم سنگھ یادو نے سماج وادی پارٹی -کانگریس اتحاد کے خلاف ایک مرتبہ پھر بیان دیا ہے۔ ملائم نے حامیوں سے ان 105 نشستوں پر لڑنے کی اپیل کی ہے ، جہاں کانگریس امیدوار کھڑے ہیں۔

لکھنو : ملائم سنگھ یادو نے سماج وادی پارٹی -کانگریس اتحاد کے خلاف ایک مرتبہ پھر بیان دیا ہے۔ ملائم نے حامیوں سے ان 105 نشستوں پر لڑنے کی اپیل کی ہے ، جہاں کانگریس امیدوار کھڑے ہیں۔ ملائم نے گزشتہ روز بھی اسی طرح کا بیان دیا تھا، تبھی سے پارٹی ترجمان دلیلیں دے رہے ہیں کہ یہ ان کی ذاتی رائے ہے۔

اتوار کو لکھنؤ میں اکھلیش یادو اور راہل گاندھی کے روڈ شو کے فورا بعد سماج وادی پارٹی کے سرپرست ملائم سنگھ یادو نے دہلی میں اتحاد کو ہی سرے سے خارج کر دیاتھا ۔ ملائم نے کہا تھا کہ وہ اتحاد کے خلاف ہیں اور سماج وادی پارٹی کے کارکنوں سے اپیل کریں گے کہ اس اتحاد کی مخالفت کریں۔

ملائم نے کہا کہ اتحاد سے کارکنوں میں مایوسی ہے، وہ ان سے کہیں گے کہ اس اتحاد کی مخالفت کریں۔ اتحاد کو لے کر ملائم نے کہا کہ اکھلیش نے ہماری خواہش کے خلاف سمجھوتہ کیا ہے، میں شروع سے ہی کانگریس سے معاہدہ کے حق نہیں تھا، کانگریس کے سبب ملک پسماندہ ہے، میں زندگی بھر کانگریس کی مخالفت کرتا رہا ہوں۔

علاوہ ازیں ملائم نے ٹکٹوں کی تقسیم پر بھی وزیر اعلی اکھلیش کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ ہمارے جن لوگوں کے ٹکٹ کاٹ دئے گئے ہیں، وہ اب کیا کریں گے، ہم نے پانچ سال کے لئے تو موقع گنوا دیا ہے، ہمارے لیڈر اور کارکنان انتخابات لڑنے سے محروم رہ گئے ہیں۔

خیال رہے کہ ملائم سنگھ یادو کی فکر مسلم ووٹوں کے ایس پی سے بنتی دوری ہے۔ 90 کی دہائی میں ملائم کی قیادت میں ایس پی نے کانگریس سے مسلم ووٹ بینک چھینا تھا، یہی وجہ تھی کہ ملائم نے کبھی بھی کانگریس سے اتر پردیش میں براہ راست اتحاد نہیں کیا تھا۔

First published: Jan 30, 2017 01:30 PM IST