உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    لکھیم پور کھیری میں ووٹنگ میں رکاوٹ، شرارتی عناصر نے ای وی ایم میں Fevikwik ڈالی، جانچ جاری

    Youtube Video

    Lakhimpur Kheri 4th Phase Voting: لکھیم پور کھیری صدر اسمبلی سیٹ کے کادی پورشنی میں شرارتی عناصر نے ای وی ایم EVM مشین میں فیویکوئک (fevikwik) ڈال دیا جس کی وجہ سے مشین رک گئی۔ ای وی ایم میں خرابی کے بعد انتظامیہ نے ریزرو میں رکھی مشین کو شروع کرکے ووٹنگ شروع کردی۔ پولنگ تقریباً 30 منٹ تک متاثر رہی اور لوگ قطاروں میں کھڑے رہے۔

    • Share this:
      UP 4th Phase Voting: یوپی اسمبلی انتخابات (UP Assembly Elections) کے چوتھے مرحلے کے لیے 9 اضلاع کی 59 اسمبلی سیٹوں پر ووٹنگ جاری ہے۔ اس درمیان لکھیم پور کھیری (Lakhimpur Kheri) میں شرپسند عناصر نے ووٹنگ میں رکاوٹ ڈالنے کا کام کیا ہے۔ لکھیم پور کھیری صدر اسمبلی سیٹ کے کادی پورشنی میں شرارتی عناصر نے ای وی ایم EVM مشین میں فیویکوئک (fevikwik) ڈال دیا جس کی وجہ سے مشین رک گئی۔ ای وی ایم میں خرابی کے بعد انتظامیہ نے ریزرو میں رکھی مشین کو شروع کرکے ووٹنگ شروع کردی۔ پولنگ تقریباً 30 منٹ تک متاثر رہی اور لوگ قطاروں میں کھڑے رہے۔

      اس پورے معاملے میں پولیس افسران کا کہنا ہے کہ جس نے بھی یہ کام کیا ہے اس کی نشاندہی کی جا رہی ہے۔ جلد ہی ملزم کی شناخت کر کے اس کے خلاف مقدمہ درج کر کے جیل بھیج دیا جائے گا لیکن سب سے بڑا سوال یہ ہے کہ جب بوتھ کے اندر موبائل لے جانے کی بھی اجازت نہیں ہے تو پھر شرپسند عناصر fevikwik لیکر کیسے پہنچے۔ فی الحال پولیس ملزمان کی شناخت میں مصروف ہے۔
      چوتھے مرحلے کے لئے سیکورٹی کے سخت انتظامات
      اترپردیش اسمبلی انتخابات کے چوتھے مرحلے کے لیے سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ ووٹنگ کی تیاریوں کے تعلق سے اے ڈی جی ایل او پرشانت کمار نے کہا ہے کہ ووٹنگ سے پہلے تمام اسمبلی سیٹوں پر پرامن ووٹنگ کی پوری تیاری ہے۔ حساس بوتھوں پر خصوصی نگرانی کی جا رہی ہے۔ اے ڈی جی ایل او پرشانت کمار نے کہا کہ چوتھے مرحلے میں 59 اسمبلیوں میں سے 3 حساس ہیں۔ حساس اسمبلیوں میں حسین گنج، بندکی، فتح پور شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان میں سے 590 مجرے اور محلے غیر محفوظ ہیں جب کہ 3393 پولنگ مقامات کو تشویشناک قرار دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خواتین کو ووٹ ڈالنے کی ترغیب دینے کے لیے خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں۔ چوتھے مرحلے کے اسمبلی حلقوں میں 137 پنک بوتھ (خواتین کے بوتھ) بنائے گئے ہیں۔ پنک بوتھس پر 36 خواتین انسپکٹر، سب انسپکٹر اور 277 خواتین کانسٹیبل اور ہیڈ کانسٹیبل تعینات کی گئی ہیں۔

      EVM کی حفاظت میں 860 کمپنی پیراملٹری، 21 کمپنی پی اے سی تعینات
      پولنگ کے چوتھے مرحلے اور اس کے بعد بیلٹ باکس کی حفاظت کے لیے پولیس پوری طرح تیار ہے۔ پولنگ اسٹیشنوں، اسٹرانگ رومز اور ای وی ایم کی حفاظت کے لیے 860 کمپنی نیم فوجی دستے تعینات کیے گئے ہیں۔ یوپی پولیس کے 7022 انسپکٹر، سب انسپکٹر، 58132 کانسٹیبل، ہیڈ کانسٹیبل کو چوتھے مرحلے میں تعینات کیا گیا ہے۔ پولنگ کو پرامن بنانے کے لیے 21 کمپنی پی اے سی، 50490 ہوم گارڈز، 1850 پی آر ڈی جوان، 8486 چوکیدار بھی الیکشن ڈیوٹی پر مامور کیے گئے ہیں۔ پولیس اہلکاروں کو بھی کورونا ہدایات پر عمل کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: