உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یوپی اسمبلی الیکشن: ملائم نے 325 نشستوں پر امیدواروں کا کیا اعلان ، کئی وزرا اور ممبران اسمبلی کے کٹے ٹکٹ

    ملائم جس وقت پریس کانفرنس کر امیدواروں کی فہرست جاری کر رہے تھے، ان کے ساتھ ریاستی صدر اور ان کے چھوٹے بھائی شیو پال سنگھ یادو بھی تھے۔

    ملائم جس وقت پریس کانفرنس کر امیدواروں کی فہرست جاری کر رہے تھے، ان کے ساتھ ریاستی صدر اور ان کے چھوٹے بھائی شیو پال سنگھ یادو بھی تھے۔

    ملائم جس وقت پریس کانفرنس کر امیدواروں کی فہرست جاری کر رہے تھے، ان کے ساتھ ریاستی صدر اور ان کے چھوٹے بھائی شیو پال سنگھ یادو بھی تھے۔

    • News18.com
    • Last Updated :
    • Share this:
      لکھنؤ۔ سماج وادی پارٹی کے سربراہ ملائم سنگھ یادو نے بدھ کو یوپی انتخابات کے لئے پارٹی کے باقی بچے امیدواروں کی فہرست جاری کی۔ ملائم جس وقت پریس کانفرنس کر امیدواروں کی فہرست جاری کر رہے تھے، ان کے ساتھ ریاستی صدر اور ان کے چھوٹے بھائی شیو پال سنگھ یادو بھی تھے۔ بتا دیں کہ یوپی ایس پی صدر شیو پال یادو نے پہلے ہی 175 نشستوں پر ٹکٹ تقسیم کر دیئے ہیں۔

      پریس کانفرنس سے پہلے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے ملائم سنگھ یادو نے کہا کہ پارٹی میں جوش تو ہے لیکن اتحاد ہے کیا؟ انہوں نے کارکنوں کو یوپی انتخابات کی اہمیت بتاتے ہوئے کہا کہ جو یوپی جیتتا ہے وہ دہلی بھی جیت لیتا ہے۔

      پارٹی ورکرز سے خطاب کرتے ہوئے ملائم نے کہا، 'آپ کارکنوں کو مبارک ہو۔ آپ میں بڑا جوش ہے لیکن اتحاد ہے کیا؟ ہم بڑی لڑائی لڑنے جا رہے ہیں۔ جو یوپی جیتتا ہے وہ دہلی جیتتا ہے۔ یہ الیکشن آپ کا ہے اور 28 فروری سے پہلے ہو گا۔ مارچ میں بورڈ کے امتحانات ہیں اس لئے الیکشن فروری میں ہوگا، امیدوار بھی ہم جلد از جلد اعلان کریں گے۔

      Candidate-list-1

      پارٹی سربراہ نے کہا کہ 4200 امیدواروں نے ٹکٹ کے لئے درخواستیں دی تھیں۔ کئی ایجنسیوں سے سروے کرایا گیا ہے۔ بہت سے لوگ ایسے ہیں جنہوں نے پارٹی کے لئے بہت ایمانداری سے کام کیا ہے انہیں بھی ٹکٹ نہیں ملا لیکن حکومت بننے پر ان کو احترام ملے گا۔

      Candidate-list

      کارکنوں کی ناراضگی پر انہوں نے کہا کہ ناراضگی پہلے یا انتخابات کے بعد کر لینا۔ انتخابات سے پہلے آپ ہم سے ملے اور ہم آپ سے مل لیے یہ اچھا ہوا۔

      نشانے پر بی جے پی

      ملائم کے نشانے پر بی جے پی بھی رہی۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے کسان کو اور تاجر کو برباد کر دیا۔ غریب کو اپنے ہی پیسے کے لئے لائن میں لگا دیا۔ اب نئے نوٹ کا کاغذ بھی بیکار ہے۔ اس سے ملک کو نقصان ہوا۔ بی جے پی نے ایسا اس لئے کیا تاکہ لوگ اس کا پرانا وعدہ 15 لاکھ کو بھول جائیں اور نوٹ بندی میں الجھ جائیں۔
      First published: