ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

عہدہ کے بعد پارٹی سے بھی ديا شنكر سنگھ کی چھٹی ، 6 سال کے لئے بی جے پی سے معطل ، ایف آئی آر بھی درج

دياشنكر کے بیان پر پارلیمنٹ میں ہنگامہ کے درمیان وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے معافی مانگ لی تھی۔ لیکن مایاوتی نے دياشنكر کو پارٹی سے نکالنے کا مطالبہ کیا تھا ۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Jul 21, 2016 12:23 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
عہدہ کے بعد پارٹی سے بھی ديا شنكر سنگھ کی چھٹی ، 6 سال کے لئے بی جے پی سے معطل ، ایف آئی آر بھی درج
دياشنكر کے بیان پر پارلیمنٹ میں ہنگامہ کے درمیان وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے معافی مانگ لی تھی۔ لیکن مایاوتی نے دياشنكر کو پارٹی سے نکالنے کا مطالبہ کیا تھا ۔

لکھنو : مایاوتی پر قابل اعتراض تبصرہ کرنے والے یوپی بی جے پی کے نائب صدر دياشنكر کی مشکلیں بڑھتی جا رہی ہیں۔ یوپی بی جے پی صدر کے عہدہ سے ہٹائے جانے کے بعد ان پر مئو اور لکھنؤ میں ایس سی ایس ٹی ایکٹ کے تحت ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ جلد ہی ان گرفتار ی بھی ہو سکتی ہے۔

یوپی بی جے پی کے نائب صدر دياشنكر سنگھ نے بی ایس پی سپریمو مایاوتی پر قابل اعتراض تبصرہ کیا تھا۔ اس پر ہنگامہ آرائی کے بعد پارٹی نے آنا فانا ان کو عہدہ سے ہٹا دیا تھا۔ لیکن دیر رات انہیں پارٹی سے بھی 6 سال کے لئے نکال دیا گیا۔

اس سے قبل ریاستی بی جے پی کے صدر کیشو پرساد موریا نے کہا تھا کہ پارٹی اس قسم کے بیان کو غلط بتا چکی ہے۔ دياشنكر معافی بھی مانگ چکے ہیں، مگر پارٹی نے واضح کیا ہے کہ اس طرح کے بیانات کی پارٹی میں کوئی جگہ نہیں ہے۔ پارٹی اس کو غلط مانتی ہے اور ان کو ان کے عہدہ سے اور دیگر تمام ذمہ داریوں سے آزاد کر دیا گیا ہے۔

ادھر دياشنكر کے بیان پر پارلیمنٹ میں ہنگامہ کے درمیان وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے معافی مانگ لی تھی۔ لیکن مایاوتی نے دياشنكر کو پارٹی سے نکالنے کا مطالبہ کیا تھا ۔ مایاوتی نے صاف کہا کہ اگر انہیں پارٹی سے نہیں نکالا جائے گا تو بی ایس پی تحریک چلائے گی۔

ادھر بی ایس پی کے ترجمان سدھیندر بھدوريا نے کہا کہ یہ بہت ہی شرمناک بیان ہے۔ ان پر فوری طور پر کارروائی ہونی چاہئے۔ بی ایس پی کے ایک دوسرے لیڈر ستیش مشرا نے کہا کہ دياشنكر کے خلاف پارٹی ایس سی ایس ٹی ایکٹ کے تحت ایف آئی آر درج کرائے گی۔

First published: Jul 20, 2016 05:28 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading