ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

مودی اگر مسلم مخالف ہوتے تو داڑھی نہیں رکھتے: یوپی کے وزیر محسن رضا کا عجیب وغریب بیان

اترپردیش کے وزیر برائے حج محسن رضا کا عجیب وغریب بیان سامنے آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی اگر مسلم مخالف ہوتے تو داڑھی نہیں رکھتے۔

  • Share this:
مودی اگر مسلم مخالف ہوتے تو داڑھی نہیں رکھتے: یوپی کے وزیر محسن رضا کا عجیب وغریب بیان
اترپردیش کے وزیر برائے حج محسن رضا کا عجیب وغریب بیان سامنے آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی اگر مسلم مخالف ہوتے تو داڑھی نہیں رکھتے۔

لکھنو:  اترپردیش کے وزیر برائے حج محسن رضا کا عجیب وغریب بیان سامنے آیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی اگر مسلم مخالف ہوتے تو داڑھی نہیں رکھتے۔ انہوں نے کہا کہ مودی جی مسلمانوں کے مخالف نہیں ہیں۔


محسن رضا نے یہ بیان لکھنو کے حج ہاوس میں دیا ہے۔عازمین حج کو خطاب کرتے ہوئے یوگی حکومت میں واحد مسلم وزیر محسن رضا نے آج مودی کے قصیدے پڑھے۔ اس دوران انہوں نے یہ بھی کہا کہ مسلمانوں کو اقلیت نہیں کہنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کی آبادی 20 کروڑ ہے، اس لئے مسلمانوں کو اقلیت کہنا مناسب نہیں ہے۔


مدارس میں نافذ ہوگا ڈریس کوڈ


یوگی حکومت کے وزیر محسن رضا نے ایک اور بڑا بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ مدارس میں ڈریس کوڈ نافذ کیا جائے گا۔ سابقہ حکومتوں نے مدارس کے ڈریس کوڈ پر دھیان نہیں دیا، لیکن یوگی حکومت اس پرخصوصی دھیان دے رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کو مین اسٹریم سے جوڑنے کی ضرورت ہے۔

محسن رضا نے مزید کہا کہ کرتا اور پائجامہ مدارس کا ڈریس کوڈ نہیں ہے، لہٰذا مدارس کے طلبا پر کرتا اور پائجامہ پہننے پر پابندی عائد کی جائے گی۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ محسن رضا کے بیان پرعملی اقدامات کب کیا جاتا ہے، لیکن انہوں نے آج عازمین حج کو خطاب کرتے ہوئے بڑا بیان دیا ہے۔
First published: Jul 03, 2018 09:40 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading