ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

الہ آباد کا نام بدل کر پریاگ راج کرنے کے فیصلے کے بعد یوگی حکومت نے اب کیا ایک اور فیصلہ

الہ آباد کا نام بدلنے کے بعد یوگی حکومت نے اب اس شہر کی مرکزی حیثیت ختم کرنے کا بیڑا اٹھا لیا ہے۔

  • Share this:
الہ آباد کا نام بدل کر پریاگ راج کرنے کے فیصلے کے بعد یوگی حکومت نے اب کیا ایک اور فیصلہ
یوگی حکومت الہ آباد کی تاریخی شناخت مٹانے کی کر رہی ہے کوشش

الہ آباد۔ مغلوں کے زمانے میں الہ آباد کو صوبے کی حیثیت حاصل تھی۔ انگریزوں کی حکومت آنے کے بعد بھی الہ آباد کئی دہائیوں تک یوپی کی راجدھانی رہا ۔ لیکن  اب اس تاریخی شہر کو گہن لگتا جا رہا ہے۔ حکومت کی طرف سے اس شہر  کی ہر شناخت مٹانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔


الہ آباد کا نام بدلنے کے بعد یوگی حکومت نے اب اس شہر  کی مرکزی حیثیت ختم کرنے کا بیڑا اٹھا لیا ہے۔ یوگی حکومت نے شہر میں واقع ایک صدی سے بھی زیادہ پرانے صدر دفاتر کو لکھنؤ منتقل کرنے کا  فیصلہ کیا ہے ۔ پولیس ہیڈ کوارٹر اور محکمہ مالیات کو لکھنؤ منتقل کرنے کے بعد اب محکمہ تعلیم کے صدر دفتر کو بھی لکھنؤ منتقل کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ لیکن  اس فیصلے کی سخت مخالفت شروع ہو گئی ہے۔حکومت کے اس فیصلے  کے خلاف محکمہ تعلیم کے ملازمین سڑکوں پر نکل آئے ہیں ۔گنگا جمنی تہذیب کا شہر الہ آباد کا نام بدل کر پریاگ راج کرنے کے یوگی حکومت کے فیصلے  پر ابھی زیادہ عرصہ نہیں گزرا تھا کہ حکومت نے الہ آباد میں واقع ریاستی حکومت کے صدر دفاتر کو لکھنؤ منتقل کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ اس سے پہلے یو پی پولیس ہیڈکوارٹر اور محکمہ مالیات کے صدر دفتر کو لکھنؤ منتقل کیا جا چکا ہے ۔ اب یوگی حکومت نے محکمہ تعلیم کے صدر دفتر کو لکھنؤ منتقل کرنے کا فیصلہ  کیا ہے ۔


یوگی حکومت نے الہ آباد میں واقع ریاستی حکومت کے صدر دفاتر کو لکھنؤ منتقل کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔


ریاستی حکومت کے اس فیصلے کے خلاف محکمہ تعلیم کے ملازمین زبر دست احتجاج کر رہے ہیں۔ انگریزوں  کے زمانے میں الہ آباد کئی دہائیوں تک یوپی کی راجدھانی رہا۔ یہی وجہ ہے کہ ریاستی حکومت کے بیشتر صدر دفاتر الہ آباد میں ہی واقع ہیں۔ لیکن یوگی حکومت کے آتے ہی پہلے الہ آباد کا نام بدل کر پریاگ راج کیا گیا، اس کے بعد صدر دفاتر کو لکھنؤ منتقل کرنے کا سلسلہ چل نکلا ۔ ریاستی حکومت کے فیصلے کی مخالفت کرنے والے ملازمین کا کہنا ہے کہ اگر حکومت نے اپنا فیصلہ  واپس نہیں لیا تو جلد ہی تالا بند ہڑتال شروع کر دی جائے گی۔ یو پی شکچھا وبھاگ کرم چاری سنگھ کے صدر کپل مشرا کا کہنا ہے کہ یوگی حکومت الہ آباد کی شناخت مٹا دینا چاہتی ہے۔

کپل مشرا کا یہ بھی کہنا ہے کہ محکمہ تعلیم کی لکھنؤ منتقلی کا فیصلہ کسی بھی حال میں قابل قبول نہیں ہوگا۔ ساتھ ہی احتجاجی ملازمین کا بھی یہ کہنا ہے کہ اس شہر کی تاریخی حیثیت بچانے  اور حکومت کو اپنا فیصلہ واپس لینے کے لئے سڑکوں پر نکل کر تحریک چلائی جائے گی۔
First published: Mar 04, 2020 06:30 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading