ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اپنے دو وزراء کی وجہ سے پارلیمنٹ میں پھر پھنسی مودی حکومت ، زبردست ہنگامہ آرائی

نئی دہلی : پارلیمنٹ میں مودی حکومت کے دو وزراء کو لے کر جم کر ہنگامہ ہوا۔ فروغ انسانی وسائل کی وزیر اسمرتی ایرانی اور وزیر مملکت رام شنکر کٹھیریا کے بیانات کو لے کر اپوزیشن نے پارلیمنٹ میں زبردست ہنگامہ آرائی کی ، جس کی وجہ سے دونوں ایوان کو 10 منٹ کے ملتوی بھی کرنا پڑا۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Mar 01, 2016 12:10 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اپنے دو وزراء کی وجہ سے پارلیمنٹ میں پھر پھنسی مودی حکومت ، زبردست ہنگامہ آرائی
نئی دہلی : پارلیمنٹ میں مودی حکومت کے دو وزراء کو لے کر جم کر ہنگامہ ہوا۔ فروغ انسانی وسائل کی وزیر اسمرتی ایرانی اور وزیر مملکت رام شنکر کٹھیریا کے بیانات کو لے کر اپوزیشن نے پارلیمنٹ میں زبردست ہنگامہ آرائی کی ، جس کی وجہ سے دونوں ایوان کو 10 منٹ کے ملتوی بھی کرنا پڑا۔

نئی دہلی : پارلیمنٹ میں مودی حکومت کے دو وزراء کو لے کر جم کر ہنگامہ ہوا۔ فروغ انسانی وسائل کی وزیر اسمرتی ایرانی اور وزیر مملکت رام شنکر کٹھیریا کے بیانات کو لے کر اپوزیشن نے پارلیمنٹ میں زبردست ہنگامہ آرائی کی ، جس کی وجہ سے دونوں ایوان کو 10 منٹ کے ملتوی بھی کرنا پڑا۔


راجیہ سبھا میں بی ایس پی کی سربراہ مایاوتی نے اسمرتی ایرانی کے خلاف استحقاق کی خلاف ورزی کی تجویز پیش کی ہے جبکہ لوک سبھا میں کانگریس کے لیڈر ملک ارجن كھرگے اور جیوترادتیہ سندھیا نے کٹھیریا کے بیان کو لے کر تحریک التوا پیش کی۔


اسمرتی ایرانی کے خلاف اپوزیشن متحد ہے۔ اپوزیشن کا کہنا ہے کہ جے این یو اور روہت ویمولا معاملے پر ایوان میں بحث کے دوران اسمرتی نے جو جواب دیا اس میں غلط معلومات دی گئی ہے۔ اپوزیشن جماعتوں کا کہنا ہے کہ اسمرتی ایرانی نے پارلیمنٹ میں پانچ غلط حقائق پیش کئے ہیں اور انہوں نے جان بوجھ کر ایوان کو گمراہ کیا ہے۔


وہیں بی جے پی لیڈر اور مرکزی وزیر مملکت رام شنكر کٹھیریا کے آگرہ میں دئے گئے متنازع بیان پر بھی ہنگامہ ہورہا ہے۔ اسے لے کر اپوزیشن نے حکومت کو گھیرنے کا اعلان کیا ہے۔

First published: Mar 01, 2016 11:58 AM IST