ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Huawei سے کاروبار نہیں کرنے پر امریکہ نے ریلائنس جیو کی تعریف کی

امریکہ کے وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے ریلائنس جیو کو ’ کلین ٹیلی کام‘ کمپنی قرار دیا ہے۔

  • Share this:
Huawei سے کاروبار نہیں کرنے پر امریکہ نے ریلائنس جیو کی تعریف کی
ریلائنس جیو میں چینی سامان استعمال نہیں: پومپیو

امریکہ کے وزیر خارجہ مائیک پومپیو (Mike Pompeo) نے ریلائنس جیو کو ’ کلین ٹیلی کام‘ کمپنی قرار دیا ہے۔ پومپیو نے چین کی کمپنیوں کے ساتھ کاروبار سے انکار کرنے والی مواصلات فرموں کی ستائش کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ فرانس کی آرینج، ہندستان کی جیو اور آسٹریلیا کی ٹیلسٹرا ’ کلین ٹیلی کام‘ کمپنیاں ہیں۔ انہوں نے چین کی کمپنیوں کے ساتھ کاروبار کرنے سے انکار کیا ہے۔ پومپیو نے دعویٰ کیا کہ چین کی آئی ٹی کی قدآور کمپنی ہوآوے (Huawei) کے ساتھ دنیا کی مواصلاتی کمپنیوں کے سمجھوتے دھیرے دھیرے کم ہو رہے ہیں۔


پومپیو نے بدھ کو کہا ’’ دنیا کی اہم مواصلاتی کمپنیاں جیسے اسپین کی ٹیلی فونکا کے علاوہ آرینج، او 2، جیو، بیل کناڈا، ٹیلس اور راجرس اور کئی اور اب صاف ستھری ہو رہی ہیں۔ یہ کمپنیاں چین کے کمیونسٹ اسٹرکچر سے اپنے رابطے توڑ رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ کمپنیاں نگرانی کرنے والے ملکوں کی کمپنیوں مثلا ہوآوے کے ساتھ اب کاروبار کرنے سے انکار کر رہی ہیں‘‘۔ پومپیو نے کہا کہ اب ماحول چین کی ٹیکنالوجی کمپنی کے خلاف ہوتا جا رہا ہے۔


انہوں نے کہا کہ دنیا بھر کے مواصلاتی آپریٹروں کے ساتھ  Huawei کے سمجھوتے ختم ہو رہے ہیں۔ کیونکہ یہ ملک اپنے 5G نیٹ ورک کے لئے بھروسے مند وینڈر کی خدمات ہی لینا چاہتے ہیں۔ انہوں نے اس کے لئے چیک جمہوریہ، پولینڈ، سویڈن، اسٹونیا، رومانیا اور ڈنمارک کی مثال دی۔ پومپیو نے کہا کہ حال میں یونان نے بھی 5G انفراسٹرکچر کے ڈیولپمنٹ کا کام  Huawei کی بجائے ایرکسن کو دینے کی رضامندی دی ہے۔


کئی چینی ٹیلی کام کمپنیوں کے ساتھ، ہوآوے پر امریکہ سمیت متعدد ممالک نے جاسوسی کا الزام عائد کیا ہے۔ چینی کمپنیوں پر بھی صارفین کے ساتھ ٹیلی کام کمپنیوں سے ڈیٹا چوری کرنے جیسے سنگین الزامات عائد کیے گئے ہیں۔ امریکہ نے ہوآوے پر متعدد پابندیاں عائد کردی ہیں، حالانکہ ہوآوے نے اس طرح کے الزامات کی تردید کی ہے۔ ایرٹیل اور ووڈافون آئیڈیا جیسی ہندوستانی ٹیلی کام کمپنیاں چینی ہوآوے کے ساتھ اپنے نیٹ ورک آپریشن کے لئے کام کر رہی ہیں جبکہ سرکاری بی ایس این ایل زیڈ ٹی ای کے ساتھ کام کرتی ہے۔

رواں سال فروری میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دورہ ہند کے دوران ہونے والی ملاقات میں ریلائنس انڈسٹریز کے مالک مکیش امبانی نے کہا تھا کہ ریلائنس جیو میں کوئی چینی سامان نصب نہیں کیا گیا ہے۔ در حقیقت، ٹرمپ نے اپنی ملاقات کے دوران مکیش امبانی سے پوچھا تھا کہ کیا آپ 5 جی میں جانے کی تیاری کر رہے ہیں تو، اس کے جواب میں مکیش امبانی نے کہا کہ ہم 5 جی کی تیاری کر رہے ہیں۔ نیز، ہم ایک ایسا نیٹ ورک بنا رہے ہیں جس میں چینی کمپنیوں کے آلات استعمال نہیں ہوں گے۔

گلوان میں فوجیوں کی شہادت کے بعد حکومت نے چینی ٹیلی کام کمپنیوں کے خلاف سخت موقف اختیار کیا ہے۔ حکومت نے بی ایس این ایل کو چینی سامان سے دور رہنے کا حکم دیا ہے۔ بی ایس این ایل نے چینی کمپنیوں کے ساتھ معاہدے منسوخ کرنے کا بھی اعلان کیا ہے۔

یو این آئی، اردو کے ان پٹ کے ساتھ
First published: Jun 25, 2020 03:13 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading