ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شہریت قانون پر ہنگامہ: امریکہ نے جاری کی ایڈوائزری، ہندوستان سے کہا۔ اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ کرے

امریکی محکمہ خارجہ کے ایک ترجمان نے جمعرات کو کہا’’ امریکہ ہندوستان سے اپیل کرتا ہے کہ وہ اپنے آئینی اور جمہوری اقدار کو برقرار رکھتے ہوئے مذہبی اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ کرے‘‘۔

  • Share this:
شہریت قانون پر ہنگامہ: امریکہ نے جاری کی ایڈوائزری، ہندوستان سے کہا۔ اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ کرے
شہریت ترمیمی قانون کے خلاف آسام میں احتجاج جاری

نئی دہلی۔ شہریت ترمیمی قانون کے بعد شمال مشرق کی ریاستوں میں احتجاجی مظاہرے ہو رہے ہیں۔ خاص کر آسام میں حالات تشویشناک ہیں۔ اسی کے مدنظر اب فرانس کے بعد امریکہ نے بھی اپنے شہریوں کے لئے ایڈوائزری جاری کی ہے اور آسام نہ جانے کی صلاح دی ہے۔ امریکی محکمہ خارجہ کے ایک سینئر آفیسر نے کہا ہے کہ ہندوستان کے ذریعہ اپنے شہریت قانون میں ترمیم کئے جانے کے بعد وہ رونما ہونے والے واقعات پر قریبی نظر رکھے ہوئے ہے۔ آفیسر نے کہا کہ امریکہ نے ہندوستان سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے آئینی اور جمہوری اقدار کو برقرار رکھتے ہوئے مذہبی اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ کرے۔




شہریت ترمیمی بل کوئز میں حصہ لیں ۔


 

لوک سبھا میں شہریت ترمیمی بل ( سی اے بی ) پیر کو منظور ہوگیا ۔ اس کوئز میں حصہ لے کر اس متنازع بل کے بارے میں اپنی معلومات کا اندازہ لگائیں ۔




شہریت ترمیمی بل کے تحت تبت کے پناہ گزینوں کوملے گی شہریت ؟






 کیا، احمدیہ پناہ گزینوں جوپاکستان میں مذہبی ظلم و ستم کا شکارہوکربھاگ کرآئے انہیں شہریت ترمیمی بل کے تحت شہریت ملے گی؟







کیا، بنگلہ دیش ہندومہاجرجو 2015 میں غیرقانونی طورپرہندوستان میں داخل ہوا ہے اسے شہریت ترمیمی بل کے تحت شہریت مل جائیگی؟





بنگلہ دیش کے ایک بدھسٹ مہاجرجن کا نام آسام کے نیشنل رجسٹرآف سیٹیزنس سے نکال دیاگیاہے اور اس کے خلاف فارین ٹرابیونل میں کیس زیرالتواء ہے تو کیا اسے شہریت ترمیمی بل کے تحت شہریت مل جائیگی؟




میگھالیہ آئین کے چھٹویں شیڈول کے تحت آتاہے اور یہ شہریت ترمیمی بل کے حدود سے باہر ہے تو کیا شیلانگ کے پولیس بازار میں رہنے والے ہندوبنگلہ دیش مہاجر،شہریت ترمیمی بل کے تحت شہریت کےلیے درخواست داخل کرسکتاہے؟





کیا پاکستان سے غیرقانونی طورپر آکرناگا لینڈ کے دیما پور میں رہنے والا مہاجر شہریت ترمیمی بل کے تحت شہریت کے لیے درخواست داخل نہیں کرسکتاہے کیوں کہ ناگا لینڈ میں انرلائن پرمٹ کا نفاذ ہے جو شہریت ترمیمی بل کے حدود سے باہر ہے؟







کیا تریپورہ میں قیام پذیر بنگالی ہندو مہاجرین کو شہریت ترمیمی بل کے تحت شہریت مل سکتی ہے ؟





ہندوستان منتقل ہونے والے ہندو، سکھ، بدھیسٹ، جین، پارسی اور عیسائی مہاجرین جوپاکستان، افغانستان، بنگلہ دیش میں مذہبی ظلم وستم شکار ہوئے ہیں، انہیں شہریت ترمیمی بل کے تحت خود بخود شہریت مل جائیگی ؟




کوئی بھی ہندو مہاجر شہریت ترمیمی بل کے تحت شہریت کا دعویٰ کرسکتاہے؟






بنگلہ دیش کے چکما، ہاجنگ کے پناہ گزین جو اروناچل پریش میں قیام پذیز ہیں اور انہیں اب تک شہریت نہیں ملی ہے تو کیا انہیں شہریت ترمیم بل کے تحت شہریت مل جائیگی؟






کیا سری لنگا سے آنے والے ہندو تامل مہاجرین شہریت ترمیم بل کے تحت ہندوستانی شہریت حاصل کرسکتے ہیں؟





آسامی میں بات کرنے والے ہندو، جو جوہرہاٹ سے تعلق رکھتے ہیں اور انہیں مناسب دستاویزات کی عدم موجودگی کے سبب نیشنل رجسٹرآف سیٹزنس میں شامل نہیں کیاگیاہے؟ کیا وہ شہریت ترمیمی بل کے شہریت کے لیے درخواست داخل کرسکتے ہیں؟

 








 


ترمیم شدہ قانون میں بنگلہ دیش، پاکستان اور افغانستان میں استحصال جھیلنے والے غیر مسلموں کو شہریت فراہم کرنے کا التزام ہے۔ امریکی محکمہ خارجہ کے ایک ترجمان نے جمعرات کو کہا’’ امریکہ ہندوستان سے اپیل کرتا ہے کہ وہ اپنے آئینی اور جمہوری اقدار کو برقرار رکھتے ہوئے مذہبی اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ کرے‘‘۔ اس بارے ميں جاری کردہ بيان ميں کہا گيا ہے کہ امريکا شہریت سے متعلق قانون کے حوالے سے تمام پیش رفت پر نگاہ رکھے ہوئے ہے۔ مذہبی آزادی کا احترام اور قانون کے مطابق سب کے ساتھ یکساں سلوک دونوں ممالک کی جمہوریتوں کے بنیادی اصول ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں محکمہ خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا ’’امریکہ ہندوستان پر زور دیتا ہے کہ وہ اپنے آئین اور جمہوری اقدار کا لحاظ کرتے ہوئے ملک ميں بسنے والی مذہبی اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ کرے‘‘۔

اپنے شہریوں کے لئے جاری کی ایڈوائزری

امریکی انتظامیہ کی طرف سے جاری ایڈوائزری میں کہا گیا ہے کہ نئے شہریت قانون کے سبب شمال مشرق کی ریاستوں میں احتجاجی مظاہرے ہو رہے ہیں۔ حکومت نے کچھ علاقوں میں کرفیو بھی لگایا ہے۔ انٹرنیٹ اور موبائل خدمات متاثر ہیں۔ اس حصے میں آمد ورفت بھی متاثر ہے۔ ملک کے کچھ اور حصوں میں بھی احتجاجی مظاہرے ہو رہے ہیں۔ ایسے میں امریکی حکومت نے آسام کے رسمی سفر کو عارضی طور پر معطل کر دیا ہے۔
First published: Dec 13, 2019 08:57 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading