اپنا ضلع منتخب کریں۔

    Gaya airport: گیا ہوائی اڈے کیلئے ’GAY‘ کوڈ کا استعمال کیوں ہے نامناسب؟ اسے تبدیل کرنے کی کیوں کی جائے کوشش

    اس سلسلے میں انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن نے کہا کہ قرارداد 763 کے مطابق لوکیشن کوڈز کو مستقل سمجھا جاتا ہے اور بنیادی طور پر فضائی حفاظت سے متعلق ایک مضبوط جواز پیش کرنے کی ضرورت ہے۔

    اس سلسلے میں انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن نے کہا کہ قرارداد 763 کے مطابق لوکیشن کوڈز کو مستقل سمجھا جاتا ہے اور بنیادی طور پر فضائی حفاظت سے متعلق ایک مضبوط جواز پیش کرنے کی ضرورت ہے۔

    اس سلسلے میں انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن نے کہا کہ قرارداد 763 کے مطابق لوکیشن کوڈز کو مستقل سمجھا جاتا ہے اور بنیادی طور پر فضائی حفاظت سے متعلق ایک مضبوط جواز پیش کرنے کی ضرورت ہے۔

    • Share this:
      پارلیمانی پینل نے کہا کہ گیا ہوائی اڈے (Gaya airport) کے لیے 'GAY' کوڈ کا استعمال نامناسب ہے اور حکومت سے کہا کہ وہ اس کوڈ کو تبدیل کرنے کے لیے تمام کوششیں کرے۔ پبلک انڈرٹیکنگس کی کمیٹی نے جنوری 2021 میں پارلیمنٹ میں پیش کی گئی اپنی پہلی رپورٹ میں گیا ایئرپورٹ کے کوڈ کو 'GAY' سے تبدیل کرنے کی سفارش کی تھی اور 'YAG' جیسا متبادل کوڈ نام بھی تجویز کیا تھا۔

      وزارت برائے شہری ہوابازی کے مطابق انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن (IATA) نے بنیادی طور پر فضائی حفاظت سے متعلق معقول وجہ کے بغیر کوڈ کو تبدیل کرنے میں اپنی نااہلی کا اظہار کیا ہے۔ واضح رہے کہ انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن (IATA) ہوائی اڈوں کے لیے کوڈ تفویض کرتی ہے۔ کمیٹی نے کہا کہ کوڈ نام نامناسب، جارحانہ اور شرمناک معلوم ہوا کیونکہ گیا ایک مقدس شہر ہے۔

      جمعہ کو پارلیمنٹ میں پیش کی گئی ایک کارروائی کی رپورٹ میں پینل نے اس مسئلے کا تذکرہ کیا اور حکومت سے کہا ہے کہ اس معاملے کو انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن اور متعلقہ تنظیم کے ساتھ اٹھانے کی پوری کوشش کرے کیونکہ اس معاملے میں ایک مقدس شہر کے ہوائی اڈے کا نامناسب کوڈ نام شامل ہے۔ وزارت نے اپنے کارروائی کے جواب میں کہا ہے کہ یہ معاملہ ایئر انڈیا کے ذریعہ انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن کو بھیجا گیا تھا۔

      اس سلسلے میں انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن نے کہا کہ قرارداد 763 کے مطابق لوکیشن کوڈز کو مستقل سمجھا جاتا ہے اور بنیادی طور پر فضائی حفاظت سے متعلق ایک مضبوط جواز پیش کرنے کی ضرورت ہے۔

      وزارت نے پینل کو بتایا کہ گیا ہوائی اڈے کا آئی اے ٹی اے کوڈ 'GAY' گیا ہوائی پٹی کے آپریشنل ہونے کے بعد سے استعمال ہو رہا ہے۔ اس لیے بغیر کسی معقول وجہ کے بنیادی طور پر فضائی حفاظت سے متعلق انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن نے گیا ہوائی اڈے کے انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن کوڈ کو تبدیل کرنے میں اپنی نااہلی کا اظہار کیا ہے۔ جمعہ کو پیش کی گئی پینل کی رپورٹ میں وزارت کے جواب کا ذکر کیا گیا ہے۔

      رپورٹ میں کہا گیا کہ کمیٹی ایئر انڈیا کی IATA کی ممبر ایئر لائن ہونے کی وجہ سے بین الاقوامی ہوائی نقل و حمل ایسوسی ایشن کے ساتھ درخواست اٹھانے کی کوششوں کی تعریف کرتی ہے لیکن حکومت پر دوبارہ زور دیتی ہے کہ وہ اس معاملے کو IATA کے ساتھ اٹھانے کی تمام کوششیں کرے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: