உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Kanpur: انسٹاگرام پر ہوئی دوستی، پھر دو بچوں کی ماں نے 16 سالہ نابالغ لڑکے کا مذہب تبدیل کراکر کی شادی، پانچ گرفتار

    انسٹاگرام پر ہوئی دوستی، پھر دو بچوں کی ماں نے 16 سالہ نابالغ لڑکے کا مذہب تبدیل کراکر کی شادی، پانچ گرفتار

    انسٹاگرام پر ہوئی دوستی، پھر دو بچوں کی ماں نے 16 سالہ نابالغ لڑکے کا مذہب تبدیل کراکر کی شادی، پانچ گرفتار

    Kanpur Religion Conversion And Marriage: کانپور کے کاکا دیو تھانہ کے تحت 16 سال کے نابالغ کو ایک دو بچوں کی ماں نے انسٹاگرام کے ذریعہ پھنسایا اور اس کا مذہب تبدیل کرواکر اس سے نکاح کرلیا ۔

    • Share this:
      سندیپ سویتا

      کانپور : کانپور کے کاکا دیو تھانہ کے تحت 16 سال کے نابالغ کو ایک دو بچوں کی ماں نے انسٹاگرام کے ذریعہ پھنسایا اور اس کا مذہب تبدیل کرواکر اس سے نکاح کرلیا ۔ جب اس طرح کا یہ انوکھا معاملہ سامنے آیا تب کانپور میں نابالغ کے ماں باپ کاکادیو تھانہ پہنچ گئے ، مگر انہیں وہاں دونوں تک چکر کاٹنا پڑا ۔ پیر دیر رات جب بجرنگ دل کے لوگ کاکا دیو میں ہنگامہ کرنے لگے تب جاکر پولیس کے اعلی افسران نے اس معاملہ میں نوٹس لیا اور مقدمہ درج ہوا ۔ اب تک نکاح پڑھانے والے مولوی سمیت چار لوگوں کی گرفتاری عمل میں آچکی ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: یٰسین ملک کی سزاکی مخالفت میں ہوسکتا ہے بڑا دہشت گردانہ حملہ، خفیہ ایجنسی نے جاری کیا الرٹ


      جاج مئو کی رہنے والی مسلم خاتون نے کاکادیو کے 16 سالہ نابالغ سے انسٹاگرام پر دوستی کی ۔ دراصل 16 سالہ لڑکا میگی کی دکان میں کام کرتا ہے اور جب اس سے پولیس نے بیان لیا تو اس نے بتایا کہ اس کا دماغ خراب ہوگیا تھا اور اس سے کلمہ پڑھوایا گیا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: دہلی میں ٹرانسپورٹ افسران پر پبلک بسوں میں سفر کرنا لازمی قرار دیا گیا


      بتایا جاتا ہے کہ خاتون نے گزشتہ جمعہ کو نابالغ کو جاج مئو بلایا اور وہاں اس سے نکاح کیا ۔ مولوی نے جب نکاح پڑھایا تو اس کا ویڈیو وائرل ہوگیا ۔ اس معاملہ میں پولیس کی لاپروائی کی وجہ سے پولیس کے خلاف بھی کارروائی کی گئی ہے ۔ کاکا دیو تھانہ کے تھانہ دار اور داروغہ کو معطل کردیا گیا ہے ۔

      پولیس افسر نے بتایا کہ خاتون سمرن ، اس کی ماں جمیلہ بانو اور والد حنیف اور نکاح پڑھانے والے مولوی توحید حسین کو گرفتار کرکے جیل بھیج دیا گیا ہے ۔ پولیس نے یہ بھی بتایا کہ اس خاتون کی پہلے بھی دو شادیاں ہوچکی ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: