ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کورونا وائرس لاک ڈاون : میرٹھ میں کاروبار بری طرح متاثر ، تاجر برادری پریشان

یو پی اُدھیوگ ویپار سنگھ کے مہا نگر صدر اکرم غازی کا ماننا ہے کہ پہلے ہی ملک کے اقتصادی حالات کے بہت بہتر نہ ہونے سے کاروبار کو چلانے میں مشکلات کا سامنا تھا ، ایسے میں کورونا وبا کے خطرے نے لاک ڈاؤن میں کاروبار کو اور برباد کر دیا ہے ۔

  • Share this:
کورونا وائرس لاک ڈاون : میرٹھ میں کاروبار بری طرح متاثر ، تاجر برادری پریشان
کورونا وائرس لاک ڈاون : میرٹھ میں کاروبار بری طرح متاثر ، تاجر برادری پریشان

لاک ڈاؤن کو ایک ماہ سے زیادہ کا وقت گزر چکا ہے ، اس دوران عام افراد کی معمولات زندگی متاثر ہونے سے جہاں سب سے زیادہ اثر سماج کے غریب اور مزدور طبقے پر پڑا ہے وہیں کاروباری طبقہ بھی پریشان حال  ہے ۔ ملک میں کاروباری سرگرمیاں مکمّل طور پر بند ہونے سی اب حالات تشویش ناک ہوتے جا رہے ہیں ، ایسے میں کاروباری طبقہ اب 3 مئی کے بعد حکومت سے کچھ رعایت کی اُمید کر رہا ہے ۔ اسپورٹس ، قینچی اور کپڑا صنعت کے بڑے کاروباری شہر کی پہچان رکھنے والے میرٹھ شہر میں کاروباریوں کے مطالبات اور حالات کا جائزہ لیا گیا تو معلوم ہوا کہ موجودہ صورت حال میں کاروباری طبقہ کافی پریشان ہے اور لاک ڈاؤن میں مزید توسیع کے حالات میں کاروبار کے ختم ہونے سے خوف زدہ ہے ۔


یو پی اُدھیوگ ویپار سنگھ کے مہا نگر صدر اکرم غازی کا ماننا ہے کہ پہلے ہی ملک کے اقتصادی حالات کے بہت بہتر نہ ہونے سے کاروبار کو چلانے میں مشکلات کا سامنا تھا ، ایسے میں کورونا وبا کے خطرے نے لاک ڈاؤن میں کاروبار کو اور برباد کر دیا ہے ۔ ایک ماہ کا وقت گزرنے کے بعد عام لوگوں اور کاروباریوں میں بےچینی کا عالم ہے ۔ کاروبار بند ہونے سے دیہاڑی مزدور اور نوکری پیشہ افراد کے لیے روزگار کا مسئلہ پیدا ہو گیا ہے ۔


ضلع میں اسپورٹس کے سامان بنانے والے کارخانوں سے لیکر قینچی اور کپڑا صنعت سب ٹھپ ہے ، ایسے میں ان کارخانوں میں کام کرنے والے مزدوروں کے لئے روزی روٹی کا مسئلہ پیدا ہو گیا ہے ۔ زیادہ تر مزدور جھارکھنڈ اور بہار کے ہیں جو لاک ڈاؤن کے کھلنے کے بعد گھر واپس لوٹنے کا انتظار کر رہے ہیں ۔ لاک ڈاؤن کے دوران پیش آئی پریشانیوں کے بعد یہ مزدور بھی خوف زدہ ہیں اور اپنے اپنے وطن کو لوٹنا چاہتے ہیں ۔ ان حالات میں بھی کارخانوں کے جلد شروع ہونے کی اُمید نہیں کی جا سکتی ۔

First published: Apr 28, 2020 07:45 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading