ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

حاملہ بیوی کے پیٹ میں لڑکا ہے یا لڑکی؟ جاننے کیلئے شوہر نے کیا ایسا دل دہلا دینے والا کام ، سبھی کے اڑ گئے ہوش

پولیس نے بتایا کہ بدایوں کے سول لائن تھانہ حلقہ کے نیک پور محلہ میں رہنے والے پننا لال کی پانچ بیٹیاں ہیں ۔ اس کی بیوی ایک مرتبہ پھر حاملہ تھی ۔ پننا لال کی یہ خواہش تھی کہ اس کے گھر میں ایک بیٹا پیدا ہو اور اسی وجہ سے پننا لال نے اپنی بیوی کا پیٹ دھار دار ہتھیار سے چیر دیا ۔

  • Share this:
حاملہ بیوی کے پیٹ میں لڑکا ہے یا لڑکی؟ جاننے کیلئے شوہر نے کیا ایسا دل دہلا دینے والا کام ، سبھی کے اڑ گئے ہوش
حاملہ بیوی کے پیٹ میں لڑکا ہے یا لڑکی ؟ جاننے کیلئے شوہر کیا ایسا دل دہلا دینے والا کام ، سبھی کے اڑ گئے ہوش

اترپردیش کے بدایوں ضلع میں ایک انتہائی دل دہلا دینے والا واقعہ پیش آیا ہے ۔ ایک شوہر نے اپنی حاملہ بیوی کا پیٹ دھاردار ہتھیار سے چیر ڈالا اور وہ بھی صرف اس لئے کہ وہ دیکھنا چاہتا تھا کہ بیوی کے حمل میں پل رہا بچہ لڑکا ہے یا لڑکی ۔ اس واردات کو انجام دینے والا شخص پانچ بچیوں کا باپ ہے ۔ وہ بدایوں ضلع کے سول لائن علاقہ کے نیک پور محلہ میں رہتا ہے ۔ فی الحال بیوی کی سنگین حالت کو دیکھتے ہوئے اس کو بریلی منتقل کردیا گیا ہے۔ وہیں شوہر پولیس کی گرفت میں ہے ۔


پولیس نے بتایا کہ بدایوں کے سول لائن تھانہ حلقہ کے نیک پور محلہ میں رہنے والے پننا لال کی پانچ بیٹیاں ہیں ۔ اس کی بیوی ایک مرتبہ پھر حاملہ تھی ۔ پننا لال کی یہ خواہش تھی کہ اس کے گھر میں ایک بیٹا پیدا ہو اور اسی وجہ سے پننا لال نے اپنی بیوی کا پیٹ دھار دار ہتھیار سے چیر دیا ۔ پننا لال کے سسرال والوں کا الزام ہے کہ وہ یہ جاننا چاہتا تھا کہ ہونے والا بچہ لڑکا ہے یا لڑکی ۔


بدایوں کے سول لائن تھانہ حلقہ کے نیک پور محلہ میں رہنے والے پننا لال کی پانچ بیٹیاں ہیں ۔ اس کی بیوی ایک مرتبہ پھر حاملہ تھی ۔ علامتی تصویر ۔
بدایوں کے سول لائن تھانہ حلقہ کے نیک پور محلہ میں رہنے والے پننا لال کی پانچ بیٹیاں ہیں ۔ اس کی بیوی ایک مرتبہ پھر حاملہ تھی ۔ علامتی تصویر ۔


واقعہ کی اطلاع جب محلہ کے لوگوں کو ہوئی تو فوری طور پر پننا لال کی بیوی کو ضلع اسپتال میں داخل کرایا گیا ، جہاں اس کی سنگین حالت کے پیش نظر اس کو بریلی ریفر کردیا گیا ہے ۔ وہیں پننا لال کو پولیس نے اپنی تحویل میں لے لیا ہے ۔ پننا لال کے سسرال والوں نے واضح طور پر الزام لگایا ہے کہ پننا لال بیٹے کا خواہشمند تھا اور وہ یہ پتہ کرنا چاہتا تھا کہ ہونے والا بچہ بیٹا ہے یا بیٹی اور اسی ضد میں اس نے یہ خوفناک واردات انجام دی ۔

پننا لال کے سسرال والوں نے الزام لگایا ہے کہ پننا لال کی پہلے سے پانچ بیٹیاں ہیں ۔ اس کو بیٹے کی خواہش تھی ، جس کو لے کر اس کا اکثر اپنی بیوی سے جھگڑا بھی ہوتا تھا ۔ پننا لال کسی بھی حالت میں یہ جاننا چاہتا تھا کہ اس مرتبہ حمل میں پل رہا بچہ لڑکا ہے یا لڑکی اور اسی کی وجہ سے اس نے اس واردات کو انجام دیا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Sep 20, 2020 06:30 PM IST