ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شرمناک ! چھ سال کی معصوم بچی کے ساتھ درندگی کی ساری حدیں پار ، دیکھ کر ڈاکٹرس کے بھی ہوش اڑ گئے ، کہا : سرجری بھی مشکل

اترپردیش کے ہاپوڑ ضلع میں اغوا کرکے ایک چھ سال کی معصوم بچی کے ساتھ درندگی کی ساری حدیں پار کردی گئیں ۔ جمعہ کی صبح کو بے ہوشی کی حالت میں ملی بچی کی طبی جانچ میں آبروریزی کی تصدیق ہوئی ہے ۔

  • Share this:
شرمناک ! چھ سال کی معصوم بچی کے ساتھ درندگی کی ساری حدیں پار ، دیکھ کر ڈاکٹرس کے بھی ہوش اڑ گئے ، کہا : سرجری بھی مشکل
شرمناک ! چھ سال کی معصوم بچی کے ساتھ درندگی کی ساری حدیں پار ، دیکھ کر ڈاکٹرس کے بھی ہوش اڑ گئے ، کہا : سرجری بھی مشکل

اترپردیش کے ہاپوڑ ضلع میں اغوا کرکے ایک چھ سال کی معصوم بچی کے ساتھ درندگی کی ساری حدیں پار کردی گئیں ۔ جمعہ کی صبح کو بے ہوشی کی حالت میں ملی بچی کی طبی جانچ میں آبروریزی کی تصدیق ہوئی ہے ۔ فی الحال بچی کا علاج میرٹھ میڈیکل کالج میں کیا جارہا ہے ، جہاں اس کی حالت انتہائی نازک بتائی جارہی ہے ۔ علاج کررہے ڈاکٹر کے مطابق متاثرہ کا پرائیویٹ پارٹ ڈیمیج ہوگیا ہے ۔ چوٹیں اتنی زیادہ ہیں کہ سرجری کرنا مشکل ہے ۔


میڈیکل کالج کے ڈٓاکٹر کے مطابق ہفتہ کو آپریشن کرکے بچی کے جسم سے آنت نکال کر غلاظت کی صفائی کی گئی اور دوسرا راستہ بنا دیا گیا ہے ۔ فی الحال بچی کی حالت انتہائی سنگین ہے ۔ ڈاکٹر کے مطابق چوٹیں بے شمار ہیں ۔ ڈاکٹر نے بتایا کہ بچی ہوش میں ہے ، لیکن کافی زیادہ ڈری ہوئی ہے ۔ ادھر پولیس کی گرفت سے ملزم ابھی تک دور ہے ۔


ملزم کا اسکیچ تیار


اس سلسلہ میں پولیس نے ملزم کے اسکیچ تیار کروائے ہیں ۔ ایس پی نے بتایا کہ پولیس کی پانچ ٹیمیں ملزم کی تلاش میں مصروف ہیں ۔ آس پاس کے گاوں میں بھی تلاش تیز کردی گئی ہے ۔ جلد ہی ملزم پولیس کی گرفت میں ہوگا ۔ آس پاس کےعلاقوں کی سی سی ٹی وی فوٹیج کی بھی جانچ کی جارہی ہے ۔

ایس پی نے بتایا کہ پولیس کی پانچ ٹیمیں ملزم کی تلاش میں مصروف ہیں ۔ آس پاس کے گاوں میں بھی تلاش تیز کردی گئی ہے ۔
ایس پی نے بتایا کہ پولیس کی پانچ ٹیمیں ملزم کی تلاش میں مصروف ہیں ۔ آس پاس کے گاوں میں بھی تلاش تیز کردی گئی ہے ۔


بتادیں کہ گڑھ مکتیشور علاقہ کے ایک گاوں میں بائیک سوار نوجوان نے کھیل رہی معصوم بچی کا اغوا کیا ۔ کچھ گھنٹوں کے بعد یہ بچی ایک کھیت میں ملی ۔ اترپردیش خواتین کمیشن کی رکن راکھی تیاگی نے ہفتہ کی شام کو اسپتال پہنچ کر آبروریزی متاثرہ بچی کے اہل خانہ س ملاقات کی ۔ اہل خانہ نے بتایا کہ پولیس نے شروعات میں صرف گمشدگی کی رپورٹ درج کی تھی جبکہ لوگوں نے پولیس کو جائے واقعہ پر ہی بتایا تھا کہ کوئی بائیک سوار شخص اس کو اٹھا کر لے گیا ہے ۔ اہل خانہ نے ہاپوڑ پولیس کی اس کیس میں ناکامی اجاگر کی ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Aug 09, 2020 07:46 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading