ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کچڑے کے ڈھیر میں اس حالت میں ملی خاتون کی لاش ، دیکھ کر لوگوں کے اڑ گئے ہوش ، پولیس جانچ میں مصروف

پولیس کا کہنا ہے کہ شروعاتی جانچ کے بعد ایسا معلوم ہوتا ہے کہ خاتون کو اس کے کسی جاننے والے شخص نے ہی قتل کیا ہے اور پھر لاش کو ٹھکانے لگانے کے لیے ٹکڑوں میں تقسیم کرکے بوريي میں بھر دیا گیا ہے ۔

  • Share this:
کچڑے کے ڈھیر میں اس حالت میں ملی خاتون کی لاش ، دیکھ کر لوگوں کے اڑ گئے ہوش ، پولیس جانچ میں مصروف
کچڑے کے ڈھیر میں اس حالت میں ملی خاتون کی لاش ، دیکھ کر لوگوں کے اڑ گئے ہوش ، پولیس جانچ میں مصروف

میرٹھ میں ایک سنسنی خیز اور دل دہلانے والا قتل کا معاملہ سامنے آیا ہے ، جہاں قتل نے درندگی کی حدیں پار کرتے ہوئے خاتون کا نہ صرف قتل کیا بلکہ لاش کے 15 ٹکڑے کرکے ایک پلاسٹک کے بیگ میں بھر کر  قبرستان کی قریب کچرے کے ڈھیر میں پھینک دیا ۔ معاملہ کا انکشاف اس وقت ہوا جب لاش کے ٹکڑوں سے بھری بوری کو کُتّے گھسیٹ کر کھولنے لگے ۔ معاملہ کی جانکاری ہونے کے بعد تھانہ لسا ڈی گیٹ پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج کر تحقیقات شروع کردی ہے ۔


یہ معاملہ میرٹھ کے لساڑی روڈ تھانہ علاقہ کی فاطمہ گارڈن کالونی میں پیش آیا ، جہاں ایک قبرستان کے پیچھے ایک کچرے کے ڈھیر میں دو پلاسٹک کی بوریوں میں لاش کے یہ ٹکڑے برآمد ہوئے ۔ علاقے میں لوگوں کے اُس وقت ہوش اُڑ گئے جب کُتّے پلاسٹک کی ان بوریوں کو کھینچ رہے تھے اور  بوری پھٹنے کے بعد اُس میں سے لاش کے ٹکڑے ظاہر ہوئے ۔ علاقہ کے لوگوں نے کتوں کو بھگا کر پولیس کو اطلاع دی ۔ پولیس نے جب بوریی کھولی تو اس میں کسی خاتون کی لاش کے 15 ٹکڑے برآمد ہوئے ، لیکن لاش کا سر نہیں ملا ۔


لاش کے ٹکڑوں کو دیکھ کر ظاہر ہو رہا تھا کہ خاتون کو بڑی بے رحمی سے قتل کرکے ٹکڑے ٹکڑے کر دیا گیا ۔ تاکہ لاش کو آسانی سے ٹھکانے لگایا جا سکے ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ شروعاتی جانچ کے بعد ایسا معلوم ہوتا ہے کہ خاتون کو اس کے کسی جاننے والے شخص نے ہی قتل کیا ہے اور پھر لاش کو ٹھکانے لگانے کے لیے ٹکڑوں میں تقسیم کرکے بوريي میں بھر دیا گیا ہے ۔


پولیس اب آس پاس کے سی سی ٹی وی کیمرے کھنگال رہی ہے اور جلد ازجلد قاتل کو تلاش کر لینے کی یقین دھانی بھی کرا رہی ہے ۔ فی الحال خاتون سے متعلق کوئی جانکاری ابھی حاصل نہیں ہو سکی ہے اور پولیس کی تفتیش جاری ہے
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 26, 2020 11:50 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading