ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سالی سے بنانا چاہتا تھا جسنی تعلقات ، طے ہوئی شادی کرڈالی ایسی خوفناک حرکت ، سبھی کے اڑ گئے ہوش

ایس پی دیہات نے بتایا کہ ملزم کو میرٹھ سے گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ اس سے پوچھ گچھ کی جارہی ہے ۔ فی الحال پولیس واقعہ کی جانچ میں مصروف ہے ۔

  • Share this:
سالی سے بنانا چاہتا تھا جسنی تعلقات ، طے ہوئی شادی کرڈالی ایسی خوفناک حرکت ، سبھی کے اڑ گئے ہوش
سالی سے بنانا چاہتا تھا جسنی تعلقات ، طے ہوئی شادی کرڈالی ایسی خوفناک حرکت ، سبھی کے اڑ گئے ہوش

اترپردیش کے غازی آباد ضلع کے تھانہ مراد نگر علاقہ میں تیزاب ڈال کر لڑکی کو زخمی کرنے والے نوجوان کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے ۔ پولیس کے مطابق واردات کو انجام دینے والا ملزم متاثرہ لڑکی کا بہنوئی سراج عرف سراج الدین ہے ۔ ملزم سراج کی چھ سال پہلے متاثرہ لڑکی کی بہن سے شادی ہوئی تھی ۔ بتایا جاتا ہے کہ وہ سالی پر بری نظر رکھتا تھا ۔ سالی کے ساتھ اس کے تعلقات تھے ۔ سراج مسلسل جسنی تعلقات بنانے اور شادی کرنے کیلئے اس پر دباو ڈالتا تھا ۔


بتادیں کہ کنبہ کے ساتھ سورہی لڑکی پر ہفتہ کی صبح اس کے بہنوئی سراج نے ہی تیزاب ڈال کر اس کا چہرہ جلادیا تھا ۔ متاثرہ کی چیخ و پکار پر اہل خانہ کی آنکھ کھلی ۔ انہوں نے دیکھا کہ ان کی بیٹی کے چہرہ پر تیزاب ڈالا گیا ہے ۔ اس درمیان ملزم باہر سے دروازہ بند کرکے فرار ہوگیا تھا ۔ اہل خانہ نے پڑوسیوں کو فون کرکے دروازہ کھلوایا ، جس کے بعد لڑکی کو مقامی اسپتال میں داخل کرایا گیا ۔ وہاں سے سنگین حالت میں اس کو دہلی منتقل کردیا گیا تھا ۔


کنبہ کے ساتھ سورہی لڑکی پر ہفتہ کی صبح اس کے بہنوئی سراج نے ہی تیزاب ڈال کر اس کا چہرہ جلادیا تھا ۔
کنبہ کے ساتھ سورہی لڑکی پر ہفتہ کی صبح اس کے بہنوئی سراج نے ہی تیزاب ڈال کر اس کا چہرہ جلادیا تھا ۔


متاثرہ لڑکی کی حالت سنگین ہے ۔ اس کی دو ماہ بعد شادی ہونے والی تھی ۔ لڑکی کی ماں کی تحریر پر پولیس نے رپورٹ درج کرلی ہے ۔ ہفتہ دیر شام پولیس نے میرٹھ کے رہنے والے سراج کو گرفتار کرلیا ۔

بتایا جاتا ہے کہ سراج سالی پر بری نظر رکھتا تھا اور مسلسل جسمانی تعلقات بنانے اور شادی کرنے کیلئے دباو ڈالتا تھا ۔ جب سالی کی شادی کہیں اور طے ہوئی تو وہ کافی ناراض ہوگیا تھا ۔ اس کی کہیں اور شادی نہ ہو ، اس لئے سالی پر تیزاب ڈال کر وہ فرار ہوگیا ۔ ایس پی دیہات نے بتایا کہ ملزم کو میرٹھ سے گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ اس سے پوچھ گچھ کی جارہی ہے ۔ فی الحال پولیس واقعہ کی جانچ میں مصروف ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Dec 13, 2020 02:03 PM IST