உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Lakhimpur Kheri Violence : کسان لوپریت کے گھر پہنچے راہل گاندھی ، کہا: انصاف ملنے تک ستیہ گرہ چلے گا

    Lakhimpur Kheri Violence : کسان لوپریت سے ملے راہل گاندھی ، کہا: انصاف ملنے تک ستیہ گرہ چلے گا

    Lakhimpur Kheri Violence : کسان لوپریت سے ملے راہل گاندھی ، کہا: انصاف ملنے تک ستیہ گرہ چلے گا

    Rahul in Lakhimpur: پارٹی ذرائع نے بتایا کہ راہل گاندھی اور پرینکا واڈرا کے ساتھ چھتیس گڑھ کے وزیر اعلیٰ بھوپیش بگھیل ، پنجاب کے وزیر اعلیٰ چرنجیت سنگھ چنّی اور دپندر ہڈا بھی موجود رہے ۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      لکھیم پور : کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی اور ان کی بہن اور پارٹی کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا نے لکھیم پور کے تیکونیا علاقہ میں اتوار کے روز تشدد میں مارے گئے کسانوں کے اہل خانہ سے ملاقات کی اور انہیں تسلی دی۔ پارٹی ذرائع نے بتایا کہ راہل گاندھی اور پرینکا واڈرا کے ساتھ چھتیس گڑھ کے وزیر اعلیٰ بھوپیش بگھیل ، پنجاب کے وزیر اعلیٰ چرنجیت سنگھ چنّی اور دپندر ہڈا بھی موجود رہے ۔ اس دوران سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ دونوں رہنماوں نے علاحدہ علاحدہ کسانوں کے خاندانوں سے ملاقات کی اور انہیں تسلی دی۔ راہل گاندھی نے کہا کہ متاثرہ کنبے کے ساتھ ناانصافی نہیں ہونے دی جائے گی ۔ دکھ کی اس گھڑی میں کانگریس ان کے ساتھ کھڑی ہے اور ان کی ہر ممکن مدد کرے گی۔

      دریں اثنا لکھیم پور جارہے کانگریس کے سینئر لیڈر سچن پائلٹ اور سابق امیدوار آچاریہ پرمود کرشنم کو مرادآباد میں پولیس نے حراست میں لے لیا ہے۔ پنجاب اور چھتیس گڑھ حکومت نے لکھیم پور تشدد میں مارے گئے چار کسانوں کو 50-50 لاکھ روپے کی مالی امداد کا اعلان کیا ہے۔ اس سے قبل راہل گاندھی بدھ کی سہ پہر پارٹی کے ترجمان رندیپ سرجے والا ، پنجاب کے وزیر اعلیٰ چرنجیت سنگھ چننی ، چھتیس گڑھ کے وزیر اعلیٰ بھوپیش بگھیل اور کے سی وینوگوپال کے ساتھ لکھیم پور کا دورہ کرنے کے لیے لکھنؤ پہنچے تھے جہاں عہدیداروں نے انہیں دفعہ 144 کے نافذ ہونے اور امن و امان کا حوالہ دیکر متاثرہ اضلاع کا دورہ کرنے کی ضد چھوڑنے کی درخواست کی ۔ کافی اصرار کے باوجود راہل گاندھی ٹس سے مس نہیں ہوئے ۔


      بالآخر حکومت نے انہیں سرکاری گاڑی میں لکھیم پور جانے کی اجازت دے دی ، لیکن سابق صدر نے کہا کہ وہ پارٹی کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا کو سیتا پور سے اپنے ساتھ لے کر جائیں گے اور اپنی ہی گاڑی میں سفر کریں گے۔ حکومت نے ان کی شرط کو قبول کرتے ہوئے راہل گاندھی اور پرینکا واڈرا سمیت پانچ رہنماؤں کو تشدد سے متاثرہ ضلع جانے کی اجازت دے دی۔

      اس کے بعد پولیس کی نگرانی میں راہل گاندھی چرنجیت سنگھ چننی ، بھوپیش بگھیل ، کے سی وینوگوپال کے ساتھ اپنی نجی گاڑی میں سیتا پور کے لیے روانہ ہوئے۔ دریں اثنا ، حکومت نے پرینکا وڈرا کو تقریبا 60 گھنٹوں کے بعد رہا کیا اور ان کے خلاف تمام معاملات واپس لے لیے۔ سیتا پور میں راہل گاندھی کی گاڑی پی اے سی کور سے پرینکا وڈرا کے ساتھ لکھیم پور کے لیے روانہ ہوئی۔

      اس سے پہلے لکھنؤ ہوائی اڈے کے احاطے میں اور باہر تقریبا چار گھنٹے تک صورتحال کشیدہ رہی ۔ ہوائی اڈے کے احاطے میں افسران راہل گاندھی کو قائل کرنے کی کوشش کر رہے تھے جبکہ کانگریس کے ورکرس جم کر نعرے لگا رہے تھے۔ اس افراتفری کی وجہ سے کانپور ۔ لکھنؤ شاہراہ پر گاڑیاں رینگتی رہیں اور پولیس کو حالات کو قابو میں رکھنے کے لئے کافی مشقت کرنی پڑی۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: