ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کوچنگ کر رہے طلبہ کو وظیفہ نہ ملنے سے دشواریاں ، سماجی کارکن سندیپ پانڈے نے مرکزی وزارت کو بھیجا مکتوب

پورے ملک میں حکومت کی کوچنگ پر مشتمل اسکیموں سے اقلیتی طبقے کے ہزاروں طلبہ و طالبات کی زندگیاں اور ان کے خواب وابستہ ہیں ۔

  • Share this:
کوچنگ کر رہے طلبہ کو وظیفہ نہ ملنے سے دشواریاں ، سماجی کارکن سندیپ پانڈے نے مرکزی وزارت کو بھیجا مکتوب
کوچنگ کر رہے طلبہ کو وظیفہ نہ ملنے سے دشواریاں ، سندیپ پانڈے نے مرکزی وزارت کو بھیجا مکتوب

یوں تو کورونا وبا کی موجودہ صورت حال نے زندگی کے تمام شعبوں اور محکموں پر جمود طاری کردیا ہے اور زندگی ٹھہر سی گئی ہے ۔ لیکن اسی دوران لوگوں کو امداد پہنچانے اور ان کی دشواریاں کم کرنے کی بھی کوششیں مسلسل کی جارہی ہیں ۔ لیکن مرکزی حکومت کی نظر ابھی تک ان غریب طلبہ و طالبات پر نہیں پڑی ہے ، جو حکومت کی ایما اور امداد پر چلائے جانے والے کوچنگ سینٹروں میں کو چنگ حاصل کرتے ہیں اور انہیں 1500 روپے ماہانہ بطور وظیفہ ملتے ہیں۔


افسوس کی بات یہ ہے کہ مرکزی وزارت برائے اقلیتی امور کی جانب سے متعلقہ کوچنگ سینٹروں کو مالی سال دوہزار انیس ۔ بیس کی پہلی قسط ابھی تک نہ ملنے سے بڑی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہاہے ۔ طلبہ و طالبات کی جانب سے مسلسل بڑھتے تقاضوں سے کوچنگ سینٹر چلانے والے ذمہ داران بھی تشویش میں مبتلا ہو رہے ہیں اور چاہنے کے باوجود بھی طلبہ کو وظیفے کی رقم نہیں ادا کر پارہے ہیں ۔ اس سلسلہ میں میگسیسے ایوارڈ یافتہ معروف سماجی کارکن سندیپ پانڈے نے مرکزی وزیر برائے اقلیتی امور مختار عباس نقوی کو خط لکھ کر قسط جاری کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔


اہم بات یہ ہے کہ پورے ملک میں حکومت کی کوچنگ پر مشتمل اسکیموں سے اقلیتی طبقے کے ہزاروں طلبہ و طالبات کی زندگیاں اور ان کے خواب وابستہ ہیں ۔ ساتھ ہی وظائف کی رقم سے غریب طلبہ اپنے رہنے سہنے کے اخراجات تو پورے کرتے ہی ہیں اپنے غریب والدین کی مدد بھی کرتے ہیں ۔  لہٰذا وبا کے اس ماحول میں اگر طلبہ کے وظائف کی تقسیم کو یقینی بنا دیا جائے ، تو اقلیتوں کے ہزاروں طلبا کو راحت مل سکتی ہے ۔


اس سلسلہ میں معروف ماہر تعلیم ڈاکٹر شمشاد احمد نے بھی اسی طرح کے خیال کی ترجمانی کرتے ہوئے کہا کہ مرکزی وزیر مختار عباس نقوی اقلیتی طبقے کے طلبہ و طالبات کے مستقبل کے لئے بہت سنجیدہ ہیں اور ہمیں یقین ہے کہ وہ سندیپ پانڈے کے ذریعے بھیجی گئی تحریری گزارش پر مثبت کارروائی کریں گے۔
First published: Apr 17, 2020 09:16 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading