ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

آٹو میں دلت طالبہ سے چھیڑ چھاڑ ، اکھلیش حکومت کے وزیر کے والد پر لگا الزام

اتر پردیش کے دارالحکومت لکھنؤ میں ایک شرمناک واقعہ پیش آیا ہے ۔ اکھلیش حکومت میں ریاستی وزیر کا درجہ پائے ایک لیڈر کے والد پر ایک دلت طالبہ سے چھیڑ چھاڑ کا الزام لگا ہے

  • IBN7
  • Last Updated: Sep 10, 2016 09:49 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
آٹو میں دلت طالبہ سے چھیڑ چھاڑ ، اکھلیش حکومت کے وزیر کے والد پر لگا الزام
اتر پردیش کے دارالحکومت لکھنؤ میں ایک شرمناک واقعہ پیش آیا ہے ۔ اکھلیش حکومت میں ریاستی وزیر کا درجہ پائے ایک لیڈر کے والد پر ایک دلت طالبہ سے چھیڑ چھاڑ کا الزام لگا ہے

لکھنؤ : اتر پردیش کے دارالحکومت لکھنؤ میں ایک شرمناک واقعہ پیش آیا ہے ۔ اکھلیش حکومت میں ریاستی وزیر کا درجہ پائے ایک لیڈر کے والد پر ایک دلت طالبہ سے چھیڑ چھاڑ کا الزام لگا ہے ۔


متاثرہ طالبہ کے مطابق وہ کالج ختم ہونے کے بعد آٹو سے گھر لوٹ رہی تھی ، تبھی وزیر مملکت کے والد بھی زبردستی اس میں بیٹھ گئے ۔ طالبہ کا الزام ہے کہ آٹو میں بیٹھنے کے بعد وہ سن رسیدہ شخص اس کے ساتھ غلط حرکت کرنے لگا ۔


اس حرکت سے پریشان ہوکر طالبہ حضرت گنج چوراہے پر ہی چلتی آٹو سے کود گئی اور وہاں موجود پولیس والوں سے مدد کی فریاد کی ۔ پولیس والوں نے دلت طالبہ کی شکایت پر ملزم شخص کو گرفتار کر لیا ۔


الزام ہے کہ وزیر مملکت کے والد ہونے کی اطلاع ملنے کے بعد پولیس نے ملزم کو چھوڑ دیا ۔ اتنا ہی نہیں یوپی کی تیز طرار پولیس نے اس کے برعکس دلت طالبہ کے خلاف ہی چوری کا مقدمہ درج کر لیا ۔ وہیں لڑکی کے گھر والوں کا پولیس پر الزام ہے کہ سرکاری دباؤ میں اس نے ملزم کو چھوڑ دیا ہے ۔
First published: Sep 10, 2016 09:49 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading