உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شرمناک : ایڈفلم میں ماڈلنگ کے نام پر دو لڑکیوں سے کیا گیا ایسا گھنونا کام ، جان کر اڑجائیں گے ہوش

    شرمناک : ایڈفلم میں ماڈلنگ کے نام پر دو لڑکیوں سے کیا گیا ایسا گھنونا کام ، جان کر اڑجائیں گے ہوش

    شرمناک : ایڈفلم میں ماڈلنگ کے نام پر دو لڑکیوں سے کیا گیا ایسا گھنونا کام ، جان کر اڑجائیں گے ہوش

    Lucknow News: اترپردیش کی راجدھانی لکھنو میں دو لڑکیوں کی آبروریزی کا سنسنی خیز معاملہ سامنے آیا ہے ۔ پولیس نے معاملہ میں ہمانشو سونی نام کے ایک شخص کے خلاف ایف آئی آر درج کی ہے ۔

    • Share this:
      لکھنو : اترپردیش کی راجدھانی لکھنو میں ایڈفلم میں ماڈلنگ کا کام دلانے کے نام پر ہمانشو سونی نام کے شخص پر دو لڑکیوں کی آبروریزی کرنے کا الزام لگا ہے ۔ الزام ہے کہ اس نے انسٹاگرام کے توسط سے لڑکیوں کو گیسٹ ہاوس بلایا اور یہاں ان کی آبروریزی کی ۔ دراصل ایک لڑکی کی جب آبروریزی کی گئی تو اس نے بہرائچ کی رہنے والی اپنی دوست سے اس کا تذکرہ کیا ۔ پتہ چلا کہ وہ بھی کچھ دنوں پہلے شکار ہوئی تھی ، لیکن شرم کی وجہ سے شکایت نہیں کر پارہی تھی ۔ معاملہ میں ویبھوتی ڈویزن پولیس نے دونوں لڑکیوں کی تحریر پر ایف آئی آر درج کرلی ہے اور ہمانشو سونی کی تلاش کررہی ہے ۔

      اے سی پی پروین بھدوریا نے بتایا کہ 23 سالہ لڑکی جو ماڈل ہے ، اس نے اطلاع دی کہ اس کی اور اس کی دوست کی آبروریزی کی گئی ہے ۔ انسٹاگرام کے ذریعہ شبھم عرف پریانش ( ہمانشو ) نے ماڈلنگ کیلئے وراج کھنڈ میں واقع نیلانچل گیسٹ ہاوس میڈیا ہاوس میں بلایا تھا ۔ یہاں اس کی آبروریزی کی گئی ۔ دونوں کی تحریر پر مقدمہ درج کیا گیا ہے اور آگے کی قانونی کارروائی کی جارہی ہے ۔ پولیس نے دونوں کو طبی جانچ کیلئے بھیج دیا ہے ۔ پولیس ملزم کی تلاش میں دبش دے رہی ہے ۔

      پتہ چلا ہے کہ راجاجی پورم کا رہنے والا ہمانشو سونی ایڈ فلموں کی شوٹنگ کا کام کرتا ہے ۔ اس کا لکھنو میں کرایہ پر رہنے والی لڑکی سے انسٹاگرام پر رابطہ ہوا ۔ الزام ہے کہ ہمانشو نے ایک مشہور کمپنی میں آڈیشن دینے کے نام پر اس کو وراج کھنڈ بلایا اور اس کی آبروریزی کی ۔ مخالفت کرنے پر جان سے مارنے کی دھمکی دی ۔

      جب اس نے اپنی ایک دوسری دوست کو اس وقعہ کے بارے میں جانکاری دی تو اس نے بھی اپنی آبروریزی کی بات کہی ۔ بتایا کہ ایک ہفتہ پہلے ہمانشو نے بھی اس کی آبروریزی کی تھی ، تاہم شرم کی وجہ سے شکایت نہیں کی تھی ۔ متاثرہ کی تحریر ملنے پر پولیس نے کیس درج کرلیا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: