ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

فوج کے جوانوں کو اس طرح ہنی ٹریپ میں پھنساتی تھی لڑکی ، کھلا راز تو سبھی رہ گئے حیران

پولیس کے مطابق گرفتار ملزمین نے بتایا کہ ان کے نشانے پر راجستھان ، ہریانہ اور گجرات کے فوجی تھے ۔ لڑکی نے فوج کے کئی جوانوں کو ہنی ٹریپ میں پھنسایا ہے ۔

  • Share this:
فوج کے جوانوں کو اس طرح ہنی ٹریپ میں پھنساتی تھی لڑکی ، کھلا راز تو سبھی رہ گئے حیران
فوج کے جوانوں کو اس طرح ہنی ٹریپ میں پھنساتی تھی لڑکی ، کھلا راز تو سبھی رہ گئے حیران

میرٹھ کی نوچندی پولیس نے ہنی ٹریپ میں پھنسانے والے گروپ کو پکڑا ہے ۔ پولیس نے اس معاملہ میں لڑکی سمیت تین لوگوں کو گرفتار کیا ہے ۔ پولیس کا دعوی ہے کہ گرفتار ملزمین نے اپنا جرم قبول کرلیا ہے ۔ اس گروپ کے دیگر تین لوگوں کی تلاش میں پولیس مصروف ہے ۔ بتایا گیا ہے کہ سائبر سیل اور میرٹھ پولیس کی پوچھ گچھ میں گرفتار ملزمین نے ایک درجن سے بھی زیادہ واردات کو انجام دینے کی بات قبول کی ہے ۔


پولیس نے بتایا کہ ایک فوجی جوان کی شکایت کے بعد اس گروپ کا انکشاف ہوا ۔ کچھ دن پہلے ہریانہ کے ایک فوجی جوان نے شکایت کی تھی کہ ایک لڑکی نے انہیں میرٹھ بلایا تھا ۔ اس کے بعد انہیں لے کر ایک ہوٹل میں گئی ۔ وہاں اس نے چوری چھپے فحش ویڈیو بنالیا اور پھر فوجی جوان کو بے ہوش کرکے اس کا سارا سامان لے کر لڑکی ہوٹل سے فرار ہوگئی ۔


فوجی جوان کی شکایت کے بعد پولیس نے ہوٹل میں لگے سی سی ٹی وی کیمرے کی تصویر دیکھی ۔ اس میں لڑکی اور اس کے ایک ساتھی کی شناخت ہوگئی ۔ اس کے بعد سے نوچندی پولیس اس گروپ کی تلاش میں مصروف ہوگئی تھی ۔ پولیس کے مطابق گرفتار ملزمین نے بتایا کہ ان کے نشانے پر راجستھان ، ہریانہ اور گجرات کے فوجی تھے ۔ لڑکی نے فوج کے کئی جوانوں کو ہنی ٹریپ میں پھنسایا ہے ۔ اس لڑکی نے مظفرنگر کے رہنے والے ایک جوان سے سونے کے زیورات بھی ٹھگے تھے ۔


لڑکی ہے اس گروپ کی سرغنہ

گرفتاری کے بعد پوچھ گچھ میں ملزمین نے بتایا کہ گرفتار لڑکی اس گروپ کی سرغنہ ہے ۔ وہ فوج کے جوانوں سے سوشل میڈیا پر دوستی کرتی تھی ۔ پھر انہیں ہوٹل میں بلاتی تھی ۔ یہاں وہ اپنے شکار کا فحش ویڈیو بناتی تھی ۔ اس کے بعد لڑکی اور اس کے گروپ کے لوگ بلیک میل کرنے کا کام شروع کردیتے تھے ۔

گرفتار کی گئی لڑکی کے پاس سے پولیس نے کئی فرضی آئی ڈی ضبط کی ہیں ۔ پولیس نے کہا کہ یہ لڑکی اپنی الگ الگ آئی ڈی سے فوج کے جوانوں سے بات چیت کرتی تھی ۔ لڑکی نے پولیس کے سامنے اعتراف کیا کہ تقریبا ایک سال سے وہ فوج کے جوانوں کو پھنسا رہی تھی ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Dec 25, 2020 09:22 PM IST