ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اس پاکستانی خاتون کو 30 برسوں سے ہے ہندوستانی شہریت ملنے کا انتظار ، پابندیوں میں گزار دی آدھی سے زیادہ زندگی

میرٹھ کے فرحت مسعود سے شادی کے بعد صبا اپنا ملک چھوڑ کر ہندوستان میں تو بس گئیں ، لیکن ہندوستان کی شہری نہ بن سکیں ۔ شہریت حاصل کرنے کے لیے تمام ضروری کارروائی اور شرائط پوری کرنے کے باوجود صبا کی فائل ضلع انتظامیہ کے دفاتر کے چکروں میں اُلجھ کر رہ گئی ہے ۔

  • Share this:
اس پاکستانی خاتون کو 30 برسوں سے ہے ہندوستانی شہریت ملنے کا انتظار ، پابندیوں میں گزار دی آدھی سے زیادہ زندگی
اس پاکستانی خاتون کو 30 برسوں سے ہے ہندوستانی شہریت ملنے کا انتظار ، پابندیوں میں گزار دی آدھی سے زیادہ زندگی

سالوں کے طویل انتظار کے بعد بلند شہر میں رہنے والی پاکستانی شہری فاخرہ نورین کو ہندوستان کی شہریت حاصل ہو گئی ہے ۔ لیکن میرٹھ میں رہنے والی پاکستانی صبا فرحت کا 30 برسوں سے ہندوستانی شہریت حاصل کرنے خواب آج تک پورا نہیں ہو سکا ہے ۔ 30 برس قبل شادی کے بعد پاکستان کے لاہور سے آکر میرٹھ میں رہ رہی صبا فرحت تمام کوششوں کے باوجود ہندوستانی شہریت حاصل کرنے سے محروم ہیں ۔


میرٹھ کے فرحت مسعود سے شادی کے بعد صبا اپنا ملک چھوڑ کر ہندوستان میں تو بس گئیں ، لیکن ہندوستان کی شہری نہ بن سکیں ۔ شہریت حاصل کرنے کے لیے  تمام ضروری کارروائی اور شرائط پوری کرنے کے باوجود صبا کی فائل ضلع انتظامیہ کے دفاتر کے چکروں میں اُلجھ کر رہ گئی ہے ۔ صبا کے مطابق گزشتہ 30 برسوں سے وہ وزٹ ویزا پر ہندوستان میں رہ رہی ہے ، جس کی وجہ سے ایک عام ہندوستانی شہری کی طرح زندگی گزارنے میں ان کو کافی مشکلات کا سامنے کرنا پڑتا ہے ۔


 30 برس قبل شادی کے بعد پاکستان کے لاہور سے آکر میرٹھ میں رہ رہی صبا فرحت تمام کوششوں کے باوجود ہندوستانی شہریت حاصل کرنے سے محروم ہیں ۔
30 برس قبل شادی کے بعد پاکستان کے لاہور سے آکر میرٹھ میں رہ رہی صبا فرحت تمام کوششوں کے باوجود ہندوستانی شہریت حاصل کرنے سے محروم ہیں ۔


صبا بتاتی ہیں کہ تیس برس کا طویل عرصہ انہوں ہے پابندیوں میں گزار دیا ۔ پاکستانی شہریوں پر پابندی کی وجہ سے وہ میرٹھ سے باہر نہیں جا سکتی ۔ پاکستان جانے کے لیے بھی ویزا کی مشکلات پیش آتی ہے ۔ صبا ہندوستان کی بہو تو بن گئیں ، لیکن اس ملک کی شہری نہ بن سکیں ۔ اپنے اس درد کو بیان کرتے ہوئے صبا کی آنکھیں چھلک جاتی ہیں ۔

دوسرے پاکستانی شہریوں کو ہندوستانی شہریت حاصل کرتے ہوئے دیکھنے کے بعد صبا خود کے لیے پُرامید تو ہیں لیکن ضلع سطح پر سرکاری دفاتر کی سست رفتاری اور افسران کے رویہ سے مایوس ہیں ۔ ہندوستانی شہریت حاصل کرنے کے لئے صبا فرحت کی تمام کوششیں سرکاری دفاتر کی دہلیز پر آکر دم توڑ دیتی ہیں ۔ لیکن شہریت حاصل کرنے کے لیے صبا کی کوششیں جاری ہیں اور صبا کو اُمید ہے کہ ایک دن ان کی یہ کوشش ضرور کامیاب ہوگی ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Sep 30, 2020 02:03 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading