ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اترپردیش : ملک سے بغاوت کے الزام میں گرفتار ثنا خان کی ضمانت عرضی نامنظور

ثنا ہیر خان کو الہ آباد پولیس نے گذشتہ 24 اگست کو نوراللہ روڈ پرواقع ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا تھا ۔ ثنا خان پرہندو دیوی دیوتاؤں کی توہین کرنے اور یوٹیوب پرقابل اعتراض ویڈیوں اپ لوڈ کرنے کا الزام ہے ۔

  • Share this:
اترپردیش : ملک سے بغاوت کے الزام میں گرفتار ثنا خان کی ضمانت عرضی نامنظور
اترپردیش : ملک سے بغاوت کے الزام میں گرفتار ثنا خان کی ضمانت عرضی نامنظور

الہ آباد : ملک سے بغاوت اور ہندو مذہب کی  توہین کرنے کے الزام میں گرفتار ہونے والی ثنا خان کی ضمانت عرضی الہ آباد کی ضلع عدالت نے خارج کر دی ہے ۔ ریاستی حکومت کی طرف سے ثنا کی ضمانت عرضی کی عدالت میں سخت مخالفت کی گئی ۔ ضلع عدالت میں سر کاری وکیل گلاب چند اگرہری نے عدالت میں دلیل دی کہ ثنا خان پر لگائے گئے الزامات نہایت سنگین نوعیت کے ہیں اور یہ کہ ملزمہ ملک مخالف سرگرمیوں میں ملوث رہی ہے ، ایسے میں ملزمہ کو جیل سے چھوڑ دینا سماج اور ملک کی سلامتی کے لئے بڑا خطرہ ہو سکتا ہے ۔


عدالت نے فریقین کی دلیلیں  سننے کے بعد ضمانت عرضی خارج کرد ی ۔ ثنا ہیر خان کو الہ آباد پولیس نے گذشتہ 24 اگست کو نوراللہ روڈ پرواقع ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا تھا ۔ ثنا خان پرہندو دیوی دیوتاؤں کی توہین کرنے اور یوٹیوب پرقابل اعتراض ویڈیوں اپ لوڈ کرنے کا الزام ہے ۔ پولیس نے  ثناء خان پر 124 اے ، 120  بی ، 153 اے ، 153 بی  اور 295 اے کے تحت مقدمہ درج کیا تھا ۔ اس کے علاوہ  ثنا کے خلاف آئی ٹی ایکٹ کی کئی سنگین دفعات بھی لگائی گئی ہی ۔ ثنا خان کی طرف سے ضلع عدالت میں ضمانت عرضی داخل کی گئی تھی ۔


واضح رہے کہ ثنا خان کی شناخت ایک یو ٹیوبر کی ہے ۔ ثنا خان گذشتہ 24 اگست سے الہ آباد کی نینی سینٹرل جیل میں بند ہیں ۔ خاتون یو ٹیوبر پرالزام ہے کہ اس نے یو ٹیوب پرایسا ویڈیو اپ لوڈ کیا تھا ، جس میں ہندو دیوی دیوتاؤں کے بارے میں نازیبا کلمات ادا کئے گئے تھے ۔ پولیس نے ویڈیو اپ لوڈ  ہونے کے چوبیس گھنٹے  کے اندر ہی ثنا  کو گرفتار کر لیا  تھا ۔ پولیس کے مطابق شہر کی ثنا ہیر خان سوشل میڈیا کے ذریعے مذہبی منافرت پھیلانے کی کوشش کر رہی تھی ۔


پولیس نے ثنا کا موبائل اور لیپ ٹاپ  بھی اپنے قبضے میں لے لیا تھا اور اس  سلسلے میں اس نے اعلیٰ سطحی تحقیقات مکمل کی تھی ۔ الہ آباد کی ثنا خان کافی عرصے سے سوشل میڈیا پر سرگرم بتائی جا رہی تھی ۔ اس نے ایک یوٹیوب چینل بھی بنا رکھا تھا ۔ اس کے یوٹیوب چینل کو اب تک پانچ لاکھ سے زیادہ افراد دیکھ چکے ہیں ۔ پولیس نے ثنا کو گرفتار کرنے کے بعد اس کا لیپ ٹاپ اپنے قبضے میں لے لیا تھا ۔ پولیس نے دعویٰ کیا تھا کہ قبضہ میں لئے گئے  لیپ ٹاپ سے بڑی تعداد میں قابل اعتراض مواد ملے ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Nov 13, 2020 09:18 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading