ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Vikas Dubey Encounter : پہلے پولیس نے کہا : بارش کی وجہ سے پلٹی گاڑی ، اب کہا : سامنے آگیا تھا جانوروں کا جھنڈ

یوپی ایس ٹی ایف نے اپنے فعل کا دفاع کرتے ہوئے دعوی کیا کہ ٹیم نے اسے زندہ گرفتار کرنے کی کوشش کی لیکن وہ ایسا نہیں کرسکے۔

  • Share this:
Vikas Dubey Encounter :  پہلے پولیس نے کہا : بارش کی وجہ سے پلٹی گاڑی ، اب کہا : سامنے آگیا تھا جانوروں کا جھنڈ
Vikas Dubey Encounter : پہلے پولیس نے کہا : بارش کی وجہ سے پلٹی گاڑی ، اب کہا : سامنے آگیا تھا جانوروں کا جھنڈ

کانپور سانحہ کے کلیدی ملزم وکاس دوبے کی پولیس کے مبینہ انکاونٹر میں جمعہ کی صبح ہلاکت کے بعد اٹھنے والے سوالات کے درمیان یوپی ایس ٹی ایف نے اپنے فعل کا دفاع کرتے ہوئے دعوی کیا کہ ٹیم نے اسے زندہ گرفتار کرنے کی کوشش کی لیکن وہ ایسا نہیں کرسکے۔ ایس ٹی ایف کی جانب سے یہاں جاری بیان کے مطابق وکاس دوبے ڈی ایس پی تیج بہادر سنگھ کی قیادت میں دو گاڑیوں کے ساتھ اجین سے کانپور لایا جارہا تھا ۔ راستے میں سچیندی پولیس اسٹیشن علاقے میں کنہیا لال اسپتال ک نزدیک جس گاڑی میں وکاس دوبے تھا وہ گاڑی ڈرائیور کے کنٹرول سے اس وقت بے قابو ہوگئی جب گایوں اور بھینسوں کا جھنڈ نیشنل ہائی وے کو عبور کررہا تھا۔


گاڑی بے قابو ہوکر پلٹ گئی ، جس میں انسپکٹر رما کانت پچوری ، سب انسپکٹر پنکج سنگھ ، انپ سنگھ اور کانسٹیبل ستویر اور پردیپ کمار زخمی ہوکر بے ہوش ہوگئے ۔ حالت کا فائدہ اٹھاتے ہوئے وکاس نے رماکانت کی سروس پستول چھینی اور پلٹی ہوئی گاڑی سے باہر نکلا اور کچی روڈ پر بھاگنے لگا ۔ پلٹی ہوئی گاڑی کے پیچھے چلنے والی ایس ٹی ایف کی دوسری گاڑی جب وہاں پہنچی تو اسے معلوم ہوا کہ کس طرح وکاس پستول چھین کر فرار ہوا ہے ۔ بعداذاں ڈی ایس پی تیج بہادر کی قیادت میں ٹیم نے وکاس کا تعاقب کیا ، جس نے پو لیس ٹیم پر فائرنگ کردی ۔



پہلے سیکورٹی اہلکار نے اسے زندہ گرفتار کرنے کی کوشش کی ، لیکن جب اس نے پولیس پرسنل پر فائرنگ کی تو انہوں نے بھی اپنی دفاع میں فائرنگ کی جس میں وکاس دوبے زخمی ہوگیا ۔ زخمی ملزم کو علاج کے لئے اسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دے دیا ۔ ایس ٹی ایف نے مزید بتایا کہ وکاس دوبے گینگ لیڈر تھا اور دو جولائی کو کانپور سانحہ کے بعد اس پر آئی پی سی کی دفعات 147/148/149/302/307/394/120B کے علاوہ سی ایل اے ایکٹ کے دفعہ 7 کے تحت چوبے پور پولیس اسٹیشن میں مقدمہ درج تھا ۔ یوپی پولیس نے اس کی گرفتار پر 5 لاکھ روپے کے انعام کا بھی اعلان کیا تھا۔

قابل ذکر ہے کہ پہلے کانپور کے ایس ایس پی دنیش کمار نے بتایا تھا کہ وکاس دوبے کو لارہے قافلہ کے پیچھے کچھ گاڑیاں لگی ہوئی تھیں ۔ یہ مسلسل پولیس کے قافلہ کو فالو کررہی تھیں ، جس کی وجہ سے گاڑی تیز رفتار سے بھگانے کی کوشش کی گئی ۔ بارش تیز تھی ، اس لئے گاڑی پلٹ گئی ۔ ایس ایس پی کے مطابق اس موقع کا فائدہ اٹھاکر وکاس دوبے بھاگنے کی کوشش میں تھا ۔ ہمارے ایس ٹی ایف جوان اس گاڑی کو پیچھے سے فالو کررہے تھے ۔

انہوں نے کامبنگ کی ، فائرنگ ہوئی اور سیلف ڈیفنس میں وکاس دوبے پر گولی چلائی گئی ، جس میں وہ مارا گیا ۔ ایس ایس پی نے بتایا کہ انکاونٹر کوئی چیز نہیں ہوتی ، ہم عدالتی کارروائی کو فالو کرتے ہیں ۔ وکاس کے جو بھی غنڈے ہیں سب کو گرفتار کیا جائے گا ۔

یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 10, 2020 08:07 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading