உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اترپردیش : مدرسہ اساتذہ کی تقرری میں اُردو کی اہلیت کو ختم کرنے کی تجویز کی شدید مخالفت، جانئے کیوں

    اترپردیش : مدرسہ اساتذہ کی تقرری میں اُردو کی اہلیت کو ختم کرنے کی تجویز کی شدید مخالفت، جانئے کیوں

    اترپردیش : مدرسہ اساتذہ کی تقرری میں اُردو کی اہلیت کو ختم کرنے کی تجویز کی شدید مخالفت، جانئے کیوں

    مدارس میں اساتذہ کی تقرری کے لیے اُردو کی اہلیت کو ختم کرنے کی اس تجویز پر مسلم سماجی اور ملّی ذمہ داران بھی تشویش میں مبتلا ہیں اور مذہبی تعلیمی اداروں کے اسٹاف میں اس طرح کی گنجائش پیدا کرنے کی کوشش کو مدارس اسلامیہ کے نظام اور مزاج کے خلاف قرار دے رہے ہیں ۔

    • Share this:
    میرٹھ : یو پی مدرسہ بورڈ کے رجسٹرار کی جانب سے ریاستی حکومت کو گزشتہ روز ایک تجویز پیش کی گئی ہے جس پر اب بورڈ سے ملحق مدارس کے منتظمین اور اساتذہ کے علاوہ مسلم سماجی اور ملّی تنظیموں کے ذمہ داران بھی تشویش میں مبتلا ہو گئے ہیں اور بورڈ کی جانب سے حکومت کو پیش کی گئی اس تجویز کو غیر ضروری قرار دیتے ہوئے بورڈ انتظامیہ اور حکومت کی نیت پر سوال اٹھا رہے ہیں ۔

    یو پی مدرسہ بورڈ رجسٹرار کی جانب سے مدارس کے نصاب میں شامل اختیاری مضامین کے لیے تقرر ہونے والے اساتذہ کے لیے اُردو زبان کی اہلیت کو ختم کرنے کی تجویز پیش کی گئی ہے ۔ بورڈ کی جانب سے پیش کی گئی اس تجویز کو غیر ضروری قرار دیتے ہوئے اقلیتی طبقہ سے تعلق رکھنے والے اہل امیدواروں کی تقرری میں رکاوٹ پیدا کرنے کی سازش قرار دے رہے ہیں ۔ بورڈ سے وابستہ رہے افراد اور مدرسہ منتظمین کا کہنا ہے کہ حکومت مدارس میں ٹیچنگ کی کمی کو پورا کرنے میں ناکام رہی ہے ، ایسے میں اس طرح کی نئی نئی تجاویز کو پیش کرکے محض مُشکلات پیدا کرنے کی کوشش کر رہی ہے ۔

    وہیں مدارس میں اساتذہ کی تقرری کے لیے اُردو کی اہلیت کو ختم کرنے کی اس تجویز پر مسلم سماجی اور ملّی ذمہ داران بھی تشویش میں مبتلا ہیں اور مذہبی تعلیمی اداروں کے اسٹاف میں اس طرح کی گنجائش پیدا کرنے کی کوشش کو مدارس اسلامیہ کے نظام اور مزاج کے خلاف قرار دے رہے ہیں ۔

    مدارس میں اُردو عربی فارسی کے ساتھ جدید اختیاری مضامین کی تعلیم ایک خوش آئند قدم ہے اور حکومت کی جانب سے تقرری نہ کیے جانے کے باوجود اکثر مدارس نے ان مضامین کی تعلیم کے لیے ذاتی سطح پر اساتذہ کی ضرورت کو پورا بھی کیا ہے ، لیکن اساتذہ کے لیے اُردو کی اہلیت کو ختم کرنے کی اس تجویز کو مدرسہ منتظمین اب بورڈ اور حکومت کی غیر ضروری مداخلت قرار دیتے ہوئے اس تجویز کو واپس لینے کا مطالبہ کر رہے ہیں ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: