ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Chamoli Avalanche: برفانی تودہ گرنے سے 8 لوگوں کی موت ، فوج نے 384 افراد کو بچایا ، امدای کام جاری

Uttarakhand Avalanche News: دراصل گزشتہ پانچ دنوں سے مسلسل برفباری اور بارش کی وجہ سے سمنا کے نزدیک جمعہ کو شام تقریبا چار بجے سمنا رمکھم روڈ سے چار کلو میٹر آگے برفانی تودہ گرگیا ، جس کی زد میں بارڈر روڈ آرگنائزیشن کا ایک دفتر اور دو لیبر کیمپ آگئے ۔

  • Share this:
Chamoli Avalanche: برفانی تودہ گرنے سے 8 لوگوں کی موت ، فوج نے 384 افراد کو بچایا ، امدای کام جاری
Chamoli Avalanche: برفانی تودہ گرنے سے 8 لوگوں کی موت ، فوج نے 384 افراد کو بچایا ، امدای کام جاری

دہرادون : کورونا کے دور میں اترا کھنڈ میں ایک اور قدرتی آفت نے لوگوں کو مصیبت میں ڈال دیا ہے ۔ جمعہ کو چمولی ضلع کے سمنا علاقہ میں برفانی تودے گرنے سے سینکڑوں لوگ پھنس گئے ، جنہیں بچانے کیلئے فوج دن رات لگی ہوئی ہے ۔ فوج کے مطابق اب تک 384 افراد کو بچایا گیا ہے اور انہیں محفوظ مقام پر لے جایا گیا ہے ، جن میں سے چھ لوگ سنگین حالت میں ہیں جبکہ 8 لاشیں برآمد کی گئی ہیں ۔


دراصل گزشتہ پانچ دنوں سے مسلسل برفباری اور بارش کی وجہ سے سمنا کے نزدیک جمعہ کو شام تقریبا چار بجے سمنا رمکھم روڈ سے چار کلو میٹر آگے برفانی تودہ گرگیا ، جس کی زد میں بارڈر روڈ آرگنائزیشن کا ایک دفتر اور دو لیبر کیمپ آگئے  ۔ چونکہ فوج کے کیمپ متاثرہ علاقوں سے تین کلو میٹر کی دوری پر تھے تو راحت کا کام جلد شروع کردیا گیا ، لیکن بارش اور خراب موسم کی وجہ سے مسلسل امدادی کاموں میں رخنہ پڑتا رہا ۔


رات بھر چلائی گئی مہم میں پہلے بی آر او کیمپ میں پھنسے جی آر ای ایف کے 150 ملازمین اور مزدوروں کو بحفاظت باہر نکالا گیا ۔ دونوں کیمپ میں مسلسل راحت اور بچاو کا کام جاری ہے ۔ تاکہ جلد سے جلد سب کو بحفاظت نکالا جاسکے ۔ سبھی بچائے گئے لوگوں کو فوج کے کیمپ میں رکھا گیا ہے ۔ چونکہ کورونا کا قہر جاری ہے ، ایسے میں فوج بھی پورے پروٹوکول کے تحت کارروائی کررہی ہے ۔


بتایا جارہا ہے کہ ابھی بھی کیمپ اور سڑک تعمیر کی جگہ میں کئی لوگوں کے برف کے نیچے پھنسے ہونے کا اندیشہ ہے ، اس لئے انہیں نکالنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ راحت رسانی کے کام کیلئے فوج کے ہیلی کاپٹر اور ماونٹینرنگ ریسکیو ٹیم کو اسٹینڈ بائی پر رکھا گیا ہے ۔ تاکہ ضرورت پڑنے پر ان کا استعمال کیا جاسکے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 24, 2021 06:27 PM IST