ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

وندے ماترم دیال سنگھ کالج کانام اپنی جگہ برقرار:امیتابھ سنہا

نئی دہلی: دہلی یونیورسٹی کے دیال سنگھ (شام) کالج کے نام کو تبدیل کرنے کے فیصلہ کےخلاف سخت کارروائی کرنےکی ا نسانی وسائل کےفروغ کےوزیر پرکاش جاؤڈیکرکےاعلان کےبعد کالج انتظامیہ نےکہاکہ اس نےقانونی طورسےکوئی غلط کام نہیں کی ہے۔ا

  • UNI
  • Last Updated: May 03, 2018 09:33 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
وندے ماترم دیال سنگھ کالج کانام اپنی جگہ برقرار:امیتابھ سنہا
دیال سنگھ کالج: فائل فوٹو

 


نئی دہلی:  دہلی یونیورسٹی کے دیال سنگھ (شام) کالج کے نام کو تبدیل کرنے کے فیصلہ کےخلاف سخت کارروائی کرنےکی ا نسانی وسائل کےفروغ کےوزیر پرکاش جاؤڈیکرکےاعلان کےبعد کالج انتظامیہ نےکہاکہ اس نےقانونی طورسےکوئی غلط کام نہیں کی ہے۔اس لئےاس کانام وندےماترم دیال سنگھ کالج ہی رہیگا۔



انتظامیہ کمیٹی کےچیئرمین اوربھارتیہ جنتاپارٹی کےلیڈرامیتابھ سنہانےآج اپنی صفائی میں صحافیوں سےکہاکہ کمیٹی نےدیال سنگھ کالج کانام نہیں بدلاہے۔مورننگ کالج کانام دیال سنگھ ہی ہے۔وہیں دیال سنگھ ایبونگ کالج کےطلباءکی سہولیات کےلئےاس کانام وندےماترم دیال سنگھ کالج کیاگیاہےاوراسےدہلی یونیورسٹی کےپاس منظوری کےلئےبھیجاگیاہے۔
مسٹرسنہانےکہاکہ کمیٹی نےدیال سنگھ کانام ہٹایانہیں ہے۔اس لئے یہ کہناکہ نام تبدیل کردیاگیاہےصحیح نہیں ہے۔انہوں نےیہ بھی کہاکہ انہوں نےسکھوں کےجذبات کوٹھیس نہیں پہنچایاہے۔بلکہ وہ دیال سنگھ مجیٹھیاجیسےمحب وطن کی عزت کرتے ہیں۔جنہوں نےآزادی کی لڑائی میں قربانی دی ہے۔انہوں نےکہاکہ وندےماترم کی مخالفت صرف مسلمان اورکمیونسٹ ہی کرتے ہیں۔سکھ نہیں کرتے۔سکھوں کاملک میں بہت شراکت رہاہے۔
بی جےپی کےلیڈرنےیہ بھی کہاکہ جب دیال سنگھ کالج کےنام وندےماترم پرتنازعہ ہواتومسٹرجاؤڈیکرکی رہائش گاہ پردہلی یونیورسٹی کےوائس چانسلرکےساتھ میٹنگ میں وندےماترم کالج پررضامندی ہوئی تھی۔لگتاہےکہ مسٹر جاؤڈیکردباؤ میں آکر یہ بیان دیاکہ کمیٹی کےخلاف کارروئی کریں گے۔
بھارتیہ جنتاپارٹی کےلیڈرنےکہاکہ دیال سنگھ کالج کوئی اقلیتی کالج نہیں ہے۔لیکن پارلیمنٹ میں نریش گل نےغلط بیانی سےکام لیاتھا کہ وہ ایک اقلیتی کالج ہے۔
دیال سنگھ کالج کانام وندےماترم دیال سنگھ کالج کرنےکی سخت الفاظ میں مذمت کرتےہوئےکہاکہ عام آدمی پارٹی نےاکالی دل کی ایم پی اورمرکزی وزیرہرسمرت کوربادل سےاخلاقی طورپراستعفی کی مانگ کی ہے۔
First published: May 03, 2018 09:33 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading