ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ورون گاندھی نے سیاست دانوں کے لئے قائم کی نادرمثال، گزشتہ 9 برسوں سے پارلیمنٹ سے نہیں لی تنخواہ

گاندھی خاندان سے تعلق رکھنے والے بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ ورون گاندھی کی ایک خوبی نے نہ صرف تمام اراکین پارلیمنٹ کو حیران کردیا ہے بلکہ دوسروں کے لئے سیاست میں ایک نادرمثال بھی قائم کی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Aug 12, 2018 06:35 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ورون گاندھی نے سیاست دانوں کے لئے قائم کی نادرمثال، گزشتہ 9 برسوں سے پارلیمنٹ سے نہیں لی تنخواہ
بی جے پی ممبرپارلیمنٹ ورون گاندھی: فائل فوٹو

نئی دہلی: گاندھی خاندان سے تعلق رکھنے والے اوراکثرتنازعہ کا شکاررہنے والے بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ ورون گاندھی کی ایک خوبی سے نہ صرف تمام اراکین پارلیمنٹ کو حیران کردیا ہے بلکہ دوسروں کے لئے سیاست میں ایک نادرمثال بھی قائم کی ہے۔

سنجے گاندھی اورمرکزی وزیرمینکا گاندھی کے بیٹے ورون گاندھی نے باربارمالدار اور صاحب ثروت اراکین پارلیمنٹ سے یہ اپیل کی ہے کہ وہ پارلیمنٹ سے اپنی تنخواہ نہ لیں تاکہ ان پیسوں کو ملک کی ترقی اورغریبوں کی فلاح و بہبود کے کام میں لایا جاسکے۔ اس کے لئے انہوں نے ایک مثال پیش کی ہے اور گزشتہ 9برسوں سے تنخواہ کے نام پر پارلیمنٹ سے ایک پیسہ بھی نہیں لیا ہے۔


ورون گاندھی نے یہ مثال پیش کرنے کے بعد ہی اراکین پارلیمنٹ سے اپیل کی تھی کہ جو لوگ صاحب حیثیت ہیں وہ اپنی تنخواہ نہ لیں۔اترپردیش کے سلطان پورحلقہ سے رکن پارلیمنٹ ورون گاندھی اپنے حلقے میں غریبوں کو فلاح و بہبود کے لئے کئی کام کئے ہیں۔


ورون گاندھی پارلیمنٹ میں عوامی فلاح و بہبود کے مسائل پربحث نہ ہونے اوراراکین پارلیمنٹ کی تنخواہ میں اضافہ پر بھی تشویش کا اظہار کرتے رہے ہیں۔ ان کا خیال ہے کہ پارلیمنٹ میں عوام فلاح وبہبودکے موضوع  اورغریب اور پسماندہ طبقات  کے مسائل پرزیادہ سے زیادہ بات ہونی چاہئے۔
ورون گاندھی ہمیشہ عدم مساوات خواہ وہ اقتصادی سطح پر ہو یا سماجی سطح پر یا تعلیمی سطح پر،اسے دورکرنے پر زوردیتے رہے ہیں۔ وہ بارہاتعلیم پرجی ڈی پی کا زیادہ حصہ خرچ کرنے پرزور دیتے رہے ہیں اور کہتے ہیں کہ بہت سے ملک جی ڈی پی کا 11فیصد خرچ کرتے ہیں جب کہ ہمارے یہاں صرف ایک فیصد حصہ خرچ ہوتا ہے۔
First published: Aug 12, 2018 06:07 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading