உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    رام مندر کی تعمیر کے سلسلے میں قرارداد پاس کرے مودی سركار: وی ایچ پی

    نئی دہلی۔ وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے سلسلے میں پارلیمنٹ میں ایک قرارداد پیش کرے۔

    نئی دہلی۔ وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے سلسلے میں پارلیمنٹ میں ایک قرارداد پیش کرے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔ وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے سلسلے میں پارلیمنٹ میں ایک قرارداد پیش کرے۔ وی ایچ پی لیڈر سریندر جین نے  یہاں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوتے ہوئے اس اعتماد کا اظہار کیا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی حکومت میں ہی رام مندر کا خواب شرمندہ تعبیر ہو جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کو معلوم ہے کہ وہ رام مندر کی تعمیر کے خواہاں لوگوں کی حمایت سے ہی اقتدار میں آئے ہیں اور وہ تب ہی اقتدار میں آگے بھی رہیں گے، جب وہ اپنے وعدے کو پورا کر کے رام مندر کی تعمیر کریں گے۔


      مسٹر جین نے ساتھ ہی کانگریس صدر سونیا گاندھی اور ان کے بیٹے اور کانگریس نائب صدر راہل گاندھی پر زور دیا کہ وہ اپنی نیت تبدیل کرکے رام مندر کی تعمیر کی تجویز پارلیمنٹ میں پیش کئے جانے کی حالت میں اس کی حمایت کریں۔ وی ایچ پی لیڈر نے کہا کہ محترمہ سونیا گاندھی کو یہ نہیں بھولنا چاہیے کہ 1989 میں ان کے شوہر راجیو گاندھی نے اپنا انتخابی مہم اجودھیا سے ہی شروع کیا تھا اور 'رام راج' کے دنوں کو واپس لانے کے عزم کا اظہار کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ رام مندر کی تعمیر کے معاملے کو عدالت پر چھوڑنے سے وقت کی بربادی ہوگی۔


      انہوں نے ساتھ ہی ان الزامات کو بھی مسترد کیا، جن میں کہا جا رہا تھا کہ وی ایچ پی اتر پردیش کے آئندہ اسمبلی انتخابات کو ذہن میں رکھتے ہوئے رام مندر کا معاملہ اچھال رہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ "رام مندر ہمارے لئے مسئلہ نہیں ہے ، یہ ہمارا عزم ہے"۔

      First published: