உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سہواگ اور گمبھیر کے بعد اب جیٹلی کی حمایت میں اترے وراٹ، شیکھر اور ایشانت

    نئی دہلی: دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈي ڈي سي اے) میں بدعنوانی کے الزام کا سامنا کر نے والے مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی حمایت میں وریندر سہواگ اور گوتم گمبھیر کے بعد اب ہندستانی ٹیسٹ کپتان وراٹ کوہلی، اوپنر شکھر دھون اور تیز بولر ایشانت شرما بھی اتر آئے ہیں۔

    نئی دہلی: دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈي ڈي سي اے) میں بدعنوانی کے الزام کا سامنا کر نے والے مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی حمایت میں وریندر سہواگ اور گوتم گمبھیر کے بعد اب ہندستانی ٹیسٹ کپتان وراٹ کوہلی، اوپنر شکھر دھون اور تیز بولر ایشانت شرما بھی اتر آئے ہیں۔

    نئی دہلی: دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈي ڈي سي اے) میں بدعنوانی کے الزام کا سامنا کر نے والے مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی حمایت میں وریندر سہواگ اور گوتم گمبھیر کے بعد اب ہندستانی ٹیسٹ کپتان وراٹ کوہلی، اوپنر شکھر دھون اور تیز بولر ایشانت شرما بھی اتر آئے ہیں۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی: دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن (ڈي ڈي سي اے) میں بدعنوانی کے الزام کا سامنا کر نے والے مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی حمایت میں وریندر سہواگ اور گوتم گمبھیر کے بعد اب ہندستانی ٹیسٹ کپتان وراٹ کوہلی، اوپنر شکھر دھون اور تیز بولر ایشانت شرما بھی اتر آئے ہیں۔


      وراٹ نے پیر کو ٹویٹ کر کے کہاکہ ہم ارون جیٹلی جی کے شکر گزار ہیں۔جیٹلی جی نے ڈي ڈ ي سي اے کے صدر رہتے ہوئے کرکٹ کو ہمیشہ آگے بڑھانے کا کام کیا۔انہوں نے ہمیشہ کرکٹ اور کرکٹر کی ترقی میں اہم کردار ادا کیا۔جیٹلی نے اپنے صدر کے عہدے پر رہتے ہوئے کرکٹ کی بھلائی کے لئے کام کیا۔


      شکھر نے بھی ٹویٹ کرکے کہاکہ جیٹلی جی نے میرے جیسے دہلی کے کئی کھلاڑیوں کے مفادات کے لئے تمام سہولیات دستیاب کرائیں ۔انہوں نے ہمیشہ کرکٹ اور كھلاڑيوں کی ترقی کے لئے کام کیا۔شکھر کے بعد فاسٹ بولر ایشانت شرما اور متھن منہاس نے بھی ٹویٹ کرکے وزیر خزانہ جیٹلی کی حمایت کی۔اس سے پہلے اتوار کو سہواگ اور گمبھیر نے ٹویٹر پر ارون جیٹلی کا دفاع کیا تھا۔


      سابق ہندستانی کرکٹر کیرتی آزاد کی طرف سے اتوار کو ڈي ڈي سي اے میں 87 کروڑ روپے کی بدعنوانی کے الزام ​​لگائے جانے کے بعد دہلی حکومت نے معاملے میں بدعنوانی کی تحقیقات کے لئے کمیشن قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

      First published: