اپنا ضلع منتخب کریں۔

    اسلام چھوڑ کر  Waseem Rizvi نے اپنایا ہندو مذہب، رضوی سے بنے تیاگی، مرنے کے بعد چتا جلانے کی ظاہر کر چکے ہیں خواہش

    غازی آباد کے ڈاسنا کے دیوی مندر  (Dasna Temple)  میں یتی نرسمہانند سرسوتی  (Yati Narshimhanand) نے انہیں ہندو مذہب میں شامل کرایا۔  اس سے پہلے رضوی نے اپنی وصیت لکھی تھی، جس میں انہوں نے خواہش ظاہر کی تھی کہ ان کی موت کے بعد ان کی تدفین نہ کی جائے بلکہ ہندو رسم و رواج کے مطابق ان کی آخری رسومات ادا کی جائیں۔

    غازی آباد کے ڈاسنا کے دیوی مندر (Dasna Temple) میں یتی نرسمہانند سرسوتی (Yati Narshimhanand) نے انہیں ہندو مذہب میں شامل کرایا۔ اس سے پہلے رضوی نے اپنی وصیت لکھی تھی، جس میں انہوں نے خواہش ظاہر کی تھی کہ ان کی موت کے بعد ان کی تدفین نہ کی جائے بلکہ ہندو رسم و رواج کے مطابق ان کی آخری رسومات ادا کی جائیں۔

    غازی آباد کے ڈاسنا کے دیوی مندر (Dasna Temple) میں یتی نرسمہانند سرسوتی (Yati Narshimhanand) نے انہیں ہندو مذہب میں شامل کرایا۔ اس سے پہلے رضوی نے اپنی وصیت لکھی تھی، جس میں انہوں نے خواہش ظاہر کی تھی کہ ان کی موت کے بعد ان کی تدفین نہ کی جائے بلکہ ہندو رسم و رواج کے مطابق ان کی آخری رسومات ادا کی جائیں۔

    • Share this:
      نوئیڈا۔ شیعہ سینٹرل وقف بورڈ کے سابق چیئرمین وسیم رضوی (Wasim Rizvi Converts to Hindu)  نے آج سے اسلام چھوڑ کر ہندو مذہب اختیار کر لیا ہے۔ غازی آباد کے ڈاسنا کے دیوی مندر  (Dasna Temple)  میں یتی نرسمہانند سرسوتی  (Yati Narshimhanand) نے انہیں ہندو مذہب میں شامل کرایا۔ اس موقع پر یتی نرسمہانند سرسوتی نے کہا کہ ہم وسیم رضوی کے ساتھ ہیں، وسیم رضوی تیاگی برادری میں شامل ہوں گے۔
      وہیں ہندو مذہب اپنانے کے بعد وسیم رضوی Waseem Rizvi نے کہا کہ 'مذہب کی تبدیلی کی یہاں  پر کوئی بات نہیں ہے، جب مجھے اسلام سے نکالا گیا تو پھر یہ میری مرضی ہے کہ میں کون سا مذہب قبول کروں... سناتن دھرم دنیا کا سب سے پہلا  مذہب ہے' اور اس میں خوبیاں پائی جاتی ہیں، انسانیت پائی جاتی ہے۔ ہم سمجھتے ہیں کہ یہ کسی دوسرے مذہب میں نہیں ہے اور ہم اسلام کو ہم مذہب سمجھتے ہی نہیں ہیں۔ ہمارے سر پر ہر جمعے کو  انعام بڑھا دیا جاتا ہے، اس لیے آج میں سناتن مذہب کو اپنا رہا ہوں۔
      شیعہ سینٹرل وقف بورڈ کے سابق چیئرمین وسیم رضوی نے پہلے ہی اعلان کیا تھا کہ وہ اسلام چھوڑ کر ہندو مذہب اختیار کرنے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا تھا کہ داسنا دیوی مندر کے مہنت یتی نرسمہانند سرسوتی انہیں سناتن دھرم میں شامل کروائیں گے۔
      آپ کو بتاتے چلیں کہ وسیم رضوی اکثر اپنی باتوں اور حرکتوں سے تنازعات کا شکار رہتے ہیں۔ چند روز پہلے رضوی نے اپنی وصیت لکھی تھی، جس میں انہوں نے خواہش ظاہر کی تھی کہ ان کی موت کے بعد ان کی تدفین نہ کی جائے بلکہ ہندو رسم و رواج کے مطابق ان کی آخری رسومات ادا کی جائیں۔ انہوں نے یہ خواہش بھی ظاہر کی تھی کہ یتی نرسمہانند ان کی چتا کو مکھ اگنی دیں گے۔ ۔ وسیم رضوی نے اپنی وصیت کر دی ہے۔ اس میں انہوں نے مرنے کے بعد قبرستان میں دفنانے کے بجائے شمشان گھاٹ میں جلائے جانے کی خواہش ظاہر کی ہے۔ رضوی نے اپنی وصیت میں ڈاسنا مندر کے مہنت نرسمہا نندا سرسوتی کو مکھ اگنی دینے کا حق دیا ہے۔ اس حوالے سے وسیم رضوی نے ایک ویڈیو بھی جاری کی ہے۔

      وسیم رضوی نے ویڈیو جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ ملک اور دنیا میں مجھے قتل کرنے اور سر قلم کرنے کی سازش کی جا رہی ہے اور اس پر انعام کی بات ہو رہی ہے۔ رضوی کا کہنا ہے کہ میں نے سپریم کورٹ میں قرآن مجید کی 26 آیات ہٹانے کو چیلنج کیا تھا۔ وسیم نے کہا کہ یہ میرا جرم ہے کہ میں نے پیغمبر اسلام حضرت محمدﷺ پر کتاب لکھی ہے اس لیے بنیاد پرست مجھے قتل کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے اعلان کیا ہے کہ وہ مجھے قبرستان میں جگہ نہیں دیں گے۔ اس لیے میری موت کے بعد ملک میں امن رہے، اس لیے میں نے وصیت نامہ لکھ کر انتظامیہ کو بھیج دیا ہے کہ میری موت کے بعد ہندو رسم و رواج کے مطابق میرا آخری رسومات ادا کیا جائے۔

      ان کا مزید یہ بھی کہنا تھا کہ 'میرے مرنے کے بعد بھی امن قائم رہے، اس لیے میں نے وصیت نامہ لکھا ہے کہ جو میرا جسم ہے وہ ہندو دوست ہیں، وہ ان کو لکھنؤ میں دے دیا جائے اور مجھے چتا بنا کر آخری رسوم ادا کر دیجائے۔ اور ہمارے یتی نرسمہا نندا سرسوتی جی چتا کو مکھ اگنی دیں گے، میں نے ان کو اجازت دیدی ہے۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ جب سے وسیم رضوی کی یہ کتاب منظر عام پر آئی ہے، مسلم کمیونٹی ان کے خلاف احتجاج سے بھڑک اٹھی ہے۔
      قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: